The news is by your side.

Advertisement

عمران کے فیصلے پر تنقید سمجھ سے بالاتر ہے، حمزہ عباسی

کراچی: اداکار حمزہ علی عباسی نے کہا ہے کہ عمران خان کی جانب سے دھرنے کا اعلان واپس لینے کے فیصلے کو یوٹرن قرار دینا اور اُس پر تنقید سمجھ سے بالا تر ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹوئٹ کرتے ہوئے حمزہ عباسی کا کہنا ہے کہ ’’میں 2 نومبر کو عمران خان کی جانب سے دھرنے کا اعلان واپس لینے پر ہونے والی تنقید کو سمجھنے سے قاصر ہوں‘‘۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان کے مطالبے پر سپریم کورٹ نے نوٹس لیا، اگر وہ اس کے باوجود دھرنا دیتے تو چیئرمین تحریک انصاف پر بغاوت کا لیبل لگ جاتا، عمران خان نے استعفیٰ یا احتساب شروع کرنے کا مطالبہ کیا تھا، آج عمران خان نے 4 دن میں وہ کامیابی حاصل کرلی جو قوم کو 8 ماہ میں نہیں مل سکی تھی۔


پڑھیں:  اسلام آباد دھرنا عوام کے لیے نادر موقع ہے، حمزہ عباسی


 حمزہ علی عباسی کا کہنا ہے کہ بغیر دھرنے کے سپریم کورٹ کا پاناما لیکس پر نوٹس لینا اور تحقیقات شروع کرنے کا اعلان عمران خان کی بڑی کامیابی ہے۔انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ نے نوٹس لے کر نوازشریف کو جھکا دیا، اب سپریم کورٹ میں روزانہ کی بنیاد پر سماعتوں کا سلسلہ  شروع ہونے والا ہے جس میں نوازشریف عدالت کے آگے جواب دہ ہوں گے‘‘۔

انہوں نے کہا کہ اگر عمران خان سپریم کورٹ کے نوٹس لینے کے باوجود دھرنا دیتے تو وہ غدار اور خود غرض سیاست دان قرار دے دیے جاتے،اس جدوجہد کو حکومت وزیر اعظم بننے کا نام دیتی۔


اسے سے متعلق : کیرئیر کی پروا نہیں، دھرنے میں ضرور شریک ہوں‌ گا، حمزہ عباسی


حمزہ عباسی نے ایک شعر میں عمران خان کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ ’’یہ جدوجہد حب علی اور بغض معاویہ میں نہیں ہے، عمران خان نے فیصلہ کر کے ثابت کردیا کہ وہ سچے اور بہت جذباتی سیاست دان ہیں مگر اُن کی عمدہ حکمتِ عملی اس بات کا ثبوت ہے کہ وہ بے لوث لیڈر ہیں۔
Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں