The news is by your side.

محسوس ہوا جیسے ہم دہشت گرد ہیں، احتساب سے ڈرنے والے نہیں ، حمزہ شہباز

لاہور : اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز کا کہنا ہے کہ محسوس ہوا جیسے ہم دہشت گرد ہیں ، ہمیں نہ ڈرائیں،مقابلہ سیاسی میدان میں کریں، احتساب سے ڈرنے والے نہیں، مشرف کےاحتساب کو بھی بھگتا، آپ ایسی حرکتیں کرتے رہیں، ہم سرخرو ہوتے رہیں گے۔

تفصیلات کے مطابق نیب ٹیم کے جانے کے بعد اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز نے گھر کے باہر میڈیا سےگفتگو کرتے ہوئے کہاقوم نے دیکھا چادر اور چار دیواری کاتقدس پامال کیاگیا، لاکھوں ووٹ لیکر آئے ،اللہ کی مہربانی سے، ہم سے پہلے انسان ، پاکستانی ہیں، محسوس ہوا جیسے ہم دہشت گردہیں، جیسے  دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کی جاتی ہے آج ویسے کیاگیا۔

حمزہ شہباز کا کہنا تھا کہ گھرکوگھیراگیاندرگھس گئے، شہبازشریف کی ضمانت ہوئی اورعدالت نےکہانیب کی بدنیتی تھی، جب نوٹس ملاتحفظات کے باوجود پیش کیا، حمزہ شہبازکےسرخاب کے پر نہیں، میری بیٹی زندگی موت کی جنگ لڑرہی تھی اس پرعمران خان نےسیاست کی۔

میری بیٹی زندگی موت کی جنگ لڑرہی تھی اس پرعمران خان نےسیاست کی

انھوں نے کہا آج کیا قیامت آگئی جوگھر پر دھاوا بول دیاگیا، سپریم کورٹ نے کہاتھا نیب سیاست زدہ ہوگئی ہے، بریگیڈیئر اسد منیر نے نیب کی وجہ سے خودکشی کرلی، نیب تضحیک آمیزسلوک کرتی ہے، کل اسلامی نظریاتی کونسل نے بھی کہانیب تضحیک کرتی ہے۔

اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی کا کہنا تھا پشاورمیں میٹروبس میں کرپشن کی گئی انہیں کوئی پوچھنے والانہیں، گرفتاری ہوتی ہے نواز شریف، شہباز شریف اور مریم نواز کی ہوتی ہے، گرفتار کرنا ہے تو کریں لیکن کوئی قانون بھی ہوتاہے۔

گرفتارکرناہےتوکریں لیکن کوئی قانون بھی ہوتاہے

شہباز شریف کے صاحبزادے نے کہا عدالت کا آرڈر ہےگرفتاری سے 10دن پہلے آگاہ کرناہوگا، نیب کے ایک کال اپ نوٹس پر پیش ہوتے ہیں توتماشہ کی کیا ضرورت  تھی، آج نیب نےایک شرمناک حرکت کی ہے، نیب کا آج کا جو اقدام ہے یہی صورتحال تاجر کیساتھ بھی ہورہاہے۔

ان کا کہنا تھا معاشی حالات تشویشناک ہے، ہم نے پہلے دن دل پر پتھر رکھ کرحلف لیاتھا، شہباز شریف نے میثاق معیشت کیلئے مل کر چلنے کی بات کی تھی،  وہ عدالت کے فیصلے سے عوام کی نظروں میں سرخرو ہوئے، عمران خان اپنے اردگردلوگوں کودیکھیں جن وہ بچارہےہیں۔

اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی نے کہا مسلم لیگ ن کانظریاتی کارکن ہوں،1993میں 7ماہ جیل کاٹی، مشرف دورمیں جیل کےباہربیٹھتاتھا، ہمیں نہ ڈرائیں، مقابلہ سیاسی میدان میں کریں، میری گرفتاری کیلئےآج چادراورچاردیواری کوبھی نہیں دیکھاگیا۔

ہمیں نہ ڈرائیں، مقابلہ سیاسی میدان میں کریں

ان کا کہنا تھا قائدحزب اختلاف ہوں،گرفتاری سےمتعلق آگاہ کردیتے ،کال اپ نوٹسز پرتمام تحفظات کےباوجودپیش ہوا، احتساب سےڈرنےوالےنہیں،مشرف کےاحتساب کو بھی بھگتا، آپ ایسی حرکتیں کرتے رہیں ہم سرخروہوتے رہیں گے، چور ڈاکو تلاش کرنے ہیں تو اپنی کابینہ میں تلاش کریں، سپریم کورٹ کاحکم ہےلیکن ہائی کورٹ نےبھی حکم دے رکھاہے۔

حمزہ شہباز نے کہا مشاورت کےبعدآئندہ کالائحہ عمل طےکریں گے، نیب رویے سے بریگیڈیئر نے خودکشی کرلی ہرفورم پر چیلنج کریں گے، نیب نے آج ہائی کورٹ کےفیصلےکی دھجیاں اڑائی ہیں۔

موجودہ حکومت کوشہید نہیں بنانا چاہتے ہیں

انھوں نے مزید کہا معیشت سےمتعلق روزانہ خوفناک خبرپڑھتےہیں، ڈالرکوآسمان پرپہنچادیاگیاہے،روپےکی قدرگرتی جارہی ہے، موجودہ حکومت کوشہید نہیں بنانا چاہتے ہیں،عوام کیساتھ کھڑےہیں، یہ حکومت اپنےجھوٹ اورگناہوں کےبوجھ تلےدب جائےگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں