hamza نوازشریف سے اختلاف نظریاتی ہے خاندانی نہیں، حمزہ شہباز nawaz sharif
The news is by your side.

Advertisement

نوازشریف سے اختلاف نظریاتی ہے خاندانی نہیں، حمزہ شہباز

لاہور : وزیر اعلیٰ پنجاب صاحبزادے حمزہ شہباز نے کہا ہے کہ اُن کے والد کا نواز شریف اور مریم نواز سے اختلاف ہے مگر یہ اختلاف نظریاتی ہے اسے خاندانی نہ سمجھا جائے، اداروں کے ٹکراؤ سے جمہوریت کو نقصان ہوگا، نواز شریف اور مریم کو قائل کروں گا۔

یہ بات انہوں نے لاہور میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی، حمزہ شہباز نے نوازشریف اور مریم نواز سے نظریاتی اختلاف کااعتراف کرلیا، ن لیگ کی صفوں میں چنگاریاں کہاں سے اٹھ رہی تھیں اور دھواں کہاں سے اٹھ رہا تھا؟ سب سامنے آنے لگا، اختلاف کی ہنڈیا شریف خاندان کے گھر میں ہی پک رہی تھی۔

حمزہ شہباز کا تقریب سے خطاب میں کہنا تھا کہ نوازشریف اور مریم نواز سے نظریاتی اختلاف ضرور ہے اسے خاندانی نہیں سمجھا جائے۔

حمزہ نے کہا کہ مریم میری بڑی بہن ہیں ان کی عزت کرتا رہوں گا۔ این اے120میں مریم نواز نے اچھی مہم چلائی اور کامیابی ملی، نوازشریف اور مریم کو والد کے مؤقف پرقائل کرنےکی کوشش کرونگا۔

حمزہ کا کہنا تھا کہ شہبازشریف نے کبھی بھائی سے پارٹی کی صدارت نہیں مانگی، مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف ہیں اور رہیں گے، انہوں نے کہا کہ لوگ مجھے وزیراعلیٰ پنجاب کے طور پر منتخب کرینگے تویہ ان کا فیصلہ ہوگا، نواز شریف کے سامنے میرے حق میں نعرے لگنا قابل فخر ہے، میری تقدیر میں کوئی عہدہ ہوگا تو مل جائےگا۔


مزید پڑھیں: کرسی چلی جاتی ہے عزت باقی رہتی ہے، حمزہ شہباز


انہوں نے بتایا کہ میں سترہ برس کا تھا جب نواز شریف کے ساتھ جیل کاٹی، دس سال سزا کاٹی تو کیا باہرآکر سب کے ساتھ لڑنا شروع کردوں؟ سیاسی اختلافات اپنی جگہ، سب کوساتھ لےکرچلنا چاہیے، ٹکراؤ کی سیاست سے جمہوریت کا نقصان ہوگا۔
جمہوریت کیلئے بہت قربانیاں دی گئیں، ذوالفقاربھٹو اسی کیلئے پھانسی کے پھندے پر چڑھ گئے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں