The news is by your side.

Advertisement

سکھوں کی خوشیوں کے رنگ میں آج بھنگ ڈالی گئی: شاہ محمود قریشی

اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ آج کے فیصلے کے لیے دن کا تعین اپنی مثال آپ ہے، پوری دنیا میں خوشی کا سماں تھا لیکن بابری مسجد کیس کے فیصلے سے سکھوں کی خوشیوں کے رنگ میں بھنگ ڈالی گئی۔

تفصیلات کے مطابق شاہ محمود نے اے آر وائی نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سکھ خوشی منا رہے ہیں لیکن بھارتی سپریم کورٹ نے نئی بحث کا آغاز کر دیا، فیصلے کے بعد مقبوضہ کشمیر میں آگ اور بھڑک اٹھے گی۔

قبل ازیں، برطانوی نشریاتی ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے وزیر خارجہ نے کہا تھا کہ پاکستان نے نفرتوں کو مٹانے کی کوشش کی، کرتارپور راہداری کی تعمیر پاکستان کی جانب سے خیر سگالی پیغام تھا، امن بحالی کی متعدد کوششوں کا بھارت نے جواب نہیں دیا، بھارت امن چاہتا ہے تو کشمیر پر اپنی پالیسی تبدیل کر دے۔

اے آر وائی نیوز سے گفتگو میں بھارتی سپریم کورٹ کے فیصلے پر وزیر خارجہ نے کہا کہ بھارتی حکومت اس فیصلے پر کوئی نہ کوئی رد عمل کا اندازہ لگا رہی ہے، ہم سپریم کورٹ کا فیصلہ پڑھنے کے بعد ہی رد عمل دیں گے۔

تازہ ترین:  بابری مسجد کی جگہ مندر بنے گا، بھارتی سپریم کورٹ کا فیصلہ

انھوں نے کہا بھارتی سپریم کورٹ کی جانب سے آج کے دن کا انتخاب معنی خیز ہے، پاکستان نے محبتوں کی راہداری قائم کی لیکن مودی سرکار کی سیاست نفرت کی سیاست ہے، نفرت کے بیج بونا بہت خطرناک کھیل ہے، ذہن سے نکال دیں کہ پاکستان دباؤ میں آئے گا یا جھکے گا، ایسا بالکل نہیں، ہم کشمیریوں کے ساتھ کھڑے تھے، کھڑے ہیں، اور کھڑے رہیں گے۔

بھارتی سپریم کورٹ نے بابری مسجد کیس کا فیصلہ سنا دیا، عدالت نے مسجد کی متنازع زمین ہندوؤں کو دینے کا فیصلہ سناتے ہوئے کہا مسلمانوں کو ایودھیا میں متبادل جگہ دی جائے اور تین ماہ میں بھارتی حکومت بورڈ تشکیل دے کر اسکیم تیار کرے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں