The news is by your side.

Advertisement

فرانسیسی شاہکار ’ایفل ٹاور‘ 130برس کا ہوگیا

پیرس: فرانسیسی شاہکار ’ایفل ٹاور‘ ایک سو تیس برس کا ہوگیا، ایک ہزار تریسٹھ فٹ بلند ٹاور کو دیکھنے ہر سال ستر لاکھ افراد پیرس کا رخ کرتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق فرانس کے مشہور شہر پیرس میں ایفل ٹاور کو 130 سال گذشتہ روز مکمل ہوئے، اس طویل مدت میں اسے دنیا بھر سے دیکھنے والوں کی تعداد 30کروڑ سے زائد ہوگئی، یہ سلسلہ تاحال جاری ہے۔

سن 1889ء میں بننے والا ایفل ٹاور پوری دنیا کے سیاحوں کے لیے آج بھی سب سے زیادہ دلکشی کا باعث ہے۔

ایفل ٹاور کی تعمیر سے اب تک اسے دیکھنے والے سیاحوں کی تعداد 30 کروڑ سے بھی زائد ہوچکی ہے، ہرسال لاکھوں کی تعداد میں سیاح دنیا بھر سے فرانس کا رخ کرتے ہیں۔

پیرس میں بہتے دریائے سین کے کنارے لوہے کا یہ مینار انقلاب فرانس کی سوویں سالگرہ کے لیے بنایا گیا لیکن ماحول کی دلکشی نے اسے تفریح گاہ بنا دیا۔

ایفل ٹاور دن بھر اپنی شان دکھاتا ہے تو رات کو روشنیوں کا مرکز بن جاتا ہے، اس لیے پیرس آنے والے ایفل ٹاور دیکھے بغیر لوٹ کر نہیں جاتے۔

اس مینار کے سب سے بالائی حصے تک پہنچنے کے لیے 1665 سیڑھیاں چڑھنی پڑتی ہیں، ایفل ٹاور کی تین منزلیں یا پلیٹ فارم ہیں، ان میں سے پہلے پلیٹ فارم کی اونچائی 57 میٹر، دوسرے کی 115 میٹر اور تیسرے پلیٹ فارم کی بلندی 276 میٹر ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ برس قریب سات ملین ملکی اور غیر ملکی سیاح اس ٹاور کا مشاہدہ کرچکے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں