The news is by your side.

ہراسانی کیس: ’پاسورڈ اور تصاویر امریکی لڑکیوں نےخود دی تھیں‘‏

پشاور: امریکی لڑکی کو جنسی ہراساں کرنےکےکیس کی تحقیقات میں اہم پیشرفت سامنے آئی ہے، ملزم نے ‏تحقیقات کے دوران اعتراف کر لیا ہے۔

سرکل انچارج سائبرکرائم طاہرخان کے مطابق ملزم انس بی بی اےکا طالب علم ہے اور اس نے غیرقانونی طور پر ‏لڑکی کے اکاؤنٹ تک رسائی کا اعتراف کیا ہے۔

ملزم انس کے بقول پاسورڈ اور تصاویر امریکی لڑکیوں نےخود دی تھیں لڑکیوں کی تصاویرصرف ان ہی کو بھیجیں، ‏‏18سال سے زائد عمر کی لڑکیوں کے ساتھ اسنیپ چیٹ کرتاہوں۔

ایف آئی اے کا کہنا ہے کہ ملزم انسٹاگرام سے اسنیپ چیٹ کیلئےاکاؤنٹ پاسورڈ مانگتا تھا ملزم کےموبائل فون ‏سے ملنے والا ڈیٹا فرانزک کیلئے بھیج دیا ہے۔

ایف آئی اے کا کہنا ہے کہ ملزم تصاویر لے کر لڑکی کو بلیک میل کرتاتھا گزشتہ روزحیات آباد سے ملزم کو ‏گرفتار کیا گیا تھا، ملزم کی گرفتاری امریکی ایجنسی ایف بی آئی کی درخواست پرکی گئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں