The news is by your side.

Advertisement

بہن بھائیوں میں بڑا ہونا آپ کو موٹاپے میں مبتلا کرسکتا ہے

کیا آپ اپنے بہن بھائیوں میں بڑے ہیں اور چھوٹے بہن بھائیوں پر رعب جماتے رہتے ہیں؟ تو پھر اس کا نقصان جان کر آپ حیران ہوجائیں گے۔

ایک تحقیق کے مطابق چھوٹوں کا بڑا بھائی یا بہن ہونا آپ کو موٹاپے کا شکار بنا سکتا ہے۔ سوئیڈن میں 13 ہزار سے زائد افراد پر کی جانے والی ایک تحقیق کے مطابق بڑے بہن بھائی میں موٹاپے کا شکار ہونے کا خطرہ 29 فیصد زیادہ ہوتا ہے۔

ماہرین کے مطابق اس کی ایک وجہ یہ ہوسکتی ہے کہ بعض اوقات پہلے حمل کے دوران ماں کے جسم کی وہ رگیں جو بچے کو غذا پہنچاتی ہیں پتلی ہوجاتی ہیں جس کی وجہ سے بچوں کو کم غذائیت پہنچتی ہے۔

اس کمی کو پورا کرنے کے لیے بچے کا جسم زیادہ چربی بناتا ہے جو آگے چل کر موٹاپے کی شکل میں ظاہر ہوتی ہے۔

ماہرین کے مطابق والدین پہلی اولاد کا زیادہ خیال رکھتے ہیں اور اس کی خوراک کا بھی خاص خیال رکھتے ہیں جو بعض اوقات بے احتیاطی میں تبدیل ہوجاتی ہے۔ یہ تمام وجوہات مل کر بڑے بہن بھائیوں کو موٹاپے کا شکار بنا سکتی ہے۔

اس سے قبل ایک تحقیق میں بتایا گیا تھا کہ پہلی اولاد دیگر اولادوں کی نسبت زیادہ ذہین ہوتی ہے۔

ماہرین کے مطابق چونکہ کسی بھی جوڑے کا پہلا بچہ اپنے والدین کی تمام تر توجہ، نگہداشت اور دھیان پانے میں کامیاب رہتا ہے لہٰذا اس کی سطح ذہانت اپنے دیگر بہن بھائیوں کی نسبت بلند ہوتی ہے۔

پہلی بار والدین بننا چونکہ ان کے لیے نیا تجربہ ہوتا ہے لہٰذا وہ پہلے بچے کا حد سے زیادہ دھیان اور خیال رکھتے ہیں، اور معمولی معمولی مسائل پر بھی بہت زیادہ پریشان ہوجاتے ہیں۔

والدین کی یہی اضافہ توجہ بڑے بچوں کو ذہین اور باصلاحیت بنا دیتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں