site
stats
سندھ

طیارے کے انجن میں پہلے سے کوئی خرابی نہیں تھی، ترجمان پی آئی اے

کراچی : پی آئی اے نے طیارے کے انجن میں پہلے سے کسی خرابی کی خبروں کی تردید کردی۔ ترجمان کا کہنا ہے اس مرحلے پر یہ تاثر دینا کہ ایک انجن کا پنکھا اْلٹا چل رہا تھا جو حادثے کا باعث بنا یہ بات غلط اور قبل از وقت ہے۔ اس قسم کی قیاس آرائیوں سے عوام غلط نتائج اخذ کر سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان پی آئی اے نے کہا ہے کہ حویلیاں میں حادثہ کا شکار ہونے والے پی آئی اے کے اے ٹی آر طیارے کے انجن میں پہلے سے کوئی خرابی نہیں تھی۔

ترجمان پی آئی اے نے ایسی خبروں کی سختی سے تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ طیارے کے دونوں انجن ٹیک آف کے وقت بالکل ٹھیک کام کررہے تھے، دوران پرواز کوئی مسئلہ ہواجو حادثے کا باعث بنا۔ اس کی مکمل تحقیقات ایک خود مختار ادارہ سیفٹی انوسٹی گیشن بورڈ کر رہا ہے۔

پی آئی اے ترجمان کا مزید کہنا ہے کہ جائےحادثہ سے ملنے والی تمام اشیاء بشمول کاک پٹ آلات تحقیقات میں اہم معلومات فراہم کرسکتے ہیں۔

مزید پڑھیں: طیارہ حادثہ: جنید جمشید‘ دیگرشہداکی شناخت کا عمل جاری

اے ٹی آر طیاروں میں دنیا کی معروف طیارہ انجن ساز کمپنی کے انجن استعمال کئے جاتے ہیں۔ تحقیقات مکمل ہونے تک قیاس آرائیوں سے گریز کرنا چاہیئے۔ صرف چند اشیاءکی بنیاد پر حتمی رائے قائم کرنا گمراہ کن ہو سکتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top