The news is by your side.

Advertisement

حیات آباد آپریشن میں ایک زخمی دہشت گرد پکڑا گیا ہے: سی سی پی او پشاور

پشاور: سی سی پی او پشاور نے کہا ہے کہ حیات آباد آپریشن میں ایک زخمی دہشت گرد پکڑا گیا ہے، آپریشن کے شہدا کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پشاور میں حیات آباد آپریشن سے متعلق پولیس حکام نے پریس بریفنگ دی، سی سی پی او پشاور نے کہا کہ حیات آباد آپریشن کے شہدا کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں۔

انھوں نے بتایا کہ حیات آباد آپریشن میں ایک زخمی دہشت گرد پکڑا گیا ہے، یہاں سے ایک دہشت گرد گروہ نیٹ ورک چلا رہا تھا، اس گروہ سے متعلق شواہد اکٹھے کیے جا رہے ہیں۔

سی سی پی او کا کہنا تھا کہ خیبر ایجنسی کا رہائشی امجد 5 بار افغانستان جا چکا ہے، دہشت گرد امجد دبئی اور یونان بھی گیا جہاں سے ڈیپورٹ کیا گیا، وہ دہشت گردی کے بڑے واقعات میں ملوث رہا۔

یہ بھی پڑھیں:  حیات آباد آپریشن: لانس نائیک ظفر اقبال کی نماز جنازہ پشاور گیریژن میں ادا

سی سی پی او نے بتایا کہ حیات آباد واقعے میں ہائی کورٹ جج پر حملے میں استعمال ہتھیار کے شواہد بھی ملے، پہلے موٹرسائیکل بم دھماکا پھر مکان کو بارود سے اڑانے کا منصوبہ تھا، موٹر سائیکل میں بم اور مکان کے بیسمنٹ تک بارودی مواد نصب تھا۔

پشاور پولیس کے مطابق دہشت گردوں نے 60 کلو گرام دھماکا خیز مواد استعمال کرنا تھا، مکان سوات کے رہائشی کا تھا، جہاں سے لیپ ٹاپ، ڈرون اور سی ڈیز ملیں، سہولت کار نے جاوید آفریدی کے نام کا شناختی کارڈ استعمال کیا۔

سی سی پی او پشاور نے کہا کہ پہلے جو افغانستان سے چھپ کر آتے تھے اب پاسپورٹ پر آ رہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں