ایچ بی ایل نے نیویارک سے کاروبار ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا، نعمان ڈار -
The news is by your side.

Advertisement

ایچ بی ایل نے نیویارک سے کاروبار ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا، نعمان ڈار

کراچی : حبیب بینک کے صدرنعمان ڈار نے کہا ہے کہ ایچ بی ایل نے نیویارک سے رضاکارانہ طور پر کاروبار ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے،63کروڑ ڈالر جرمانے کی تجویز بہت زیادہ ہے، عدالت سے رجوع کریں گے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، حبیب بینک کے صدر کا اپنی کوتاہیوں کا اعتراف کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کوئی فاش غلطی نہیں ہوئی امریکی ادارے کی جانب سے 63کروڑ ڈالر جرمانے کی تجویزبہت زیادہ ہے، جرمانہ کم کرانے کو بنیاد بنا کر مقدمہ لڑا جائے گا۔

نعمان ڈار نے کہا کہ ایچ بی ایل نے نیویارک سے رضاکارانہ طور پر کاروبار ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے، اس ضمن میں بتدریج جلد ہی کارروائی کا آغاز ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ ایچ بی ایل پاکستان کا سب سے پرانا اور با اعتماد بینک ہے، ایچ بی ایل کا افتتاح خود بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح نے اکاوٴنٹ کھلوا کرکیا تھا۔

نعمان ڈار کا مزید کہنا تھا کہ اس فیصلے سے امریکہ سے باہر ادارے کے کاروبار پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔ امریکہ میں دنیا کے کئی بڑے بینکوں پر جرمانے عائد ہوئے اور انہوں نے ادا کیے انہوں نے کہا کہ جرمانے ادا کرنے والے بینکوں کی ساکھ پر کوئی اثر نہیں پڑتا۔


مزید پڑھیں: امریکا نے حبیب بینک پر بھاری جرمانہ عائد کردیا


ایچ بی ایل پر صرف ساؤنڈ اینڈ سیفٹی پر جرمانہ تجویز کیا جارہا ہے، صدر حبیب بینک نے اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ اس حوالے سے کوتاہی ضرور ہوئی ہے لیکن اس پر اتنا بڑا جرمانہ نہیں بنتا۔


مزید پڑھیں: ایچ بی ایل نیویارک، ارشد شریف کے تہلکہ خیز انکشافات


دنیا بھر کے کسی بھی ادارے میں اس طرح کی کوتاہی ممکن ہے، ادارہ 630ملین تک کے متوقع جرمانے کو کم سے کم کرانے کیلئے دفاع کرے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں