The news is by your side.

Advertisement

لاک ڈاؤن: کچن کو تجربات کی “بھینٹ” چڑھا دیا جائے تو….!

خوش ذائقہ اور مزے مزے کے پکوان اور کھانا پکانے کی نت نئی تراکیب آزماتے ہوئے کوئی ایسی ڈش تیار کرنا جو ذائقے اور چٹخارے کے ساتھ ساتھ غذائیت سے بھی بھرپور ہو، یقینا ایک آرٹ ہے۔

شکم سیری، جسمانی طاقت اور توانائی برقرار رکھنے کے ساتھ انسان زبان کے چٹخارے کے لیے بھی طرح طرح کے پکوان کرتا رہا ہے اور آج نت نئی ڈشیں، مزے دار کھانے بنانے کو باقاعدہ آرٹ مانا جاتا ہے۔

یہ تصاویر جو آپ دیکھ رہے ہیں‌، دنیا کے مختلف ممالک کے خاص یا روایتی پکوان کی ہیں جو شاید آپ کی بھوک چمکا دیں، لیکن ہمارا مقصد یہ نہیں‌ ہے۔

ہم چاہتے ہیں کہ کرونا کی وبا اور اس مشکل وقت میں لاک ڈاؤن کے دوران آپ اپنا وقت ضایع نہ کریں‌ بلکہ کچن میں‌ کچھ نئے تجربات کریں۔

آسٹریلیا کی ڈش

ہانگ کانگ سے ایک تصویر

شاید کینیڈا کے جسٹن ٹروڈر کو بھی یہ ڈش پسند ہو

سنگا پور کے چکن رائس میں‌ کیا خاص بات ہوسکتی ہے؟

جنوبی افریقا کی فوڈ اسٹریٹ سے ایک تصویر

اسپین کا سی فوڈ

ویتنام کی ڈش

کرونا کی وجہ سے احتیاط اور بندشِ عامہ یعنی لاک ڈاؤن کے دوران آپ کا کچن ذائقے، غذا اور غذائیت کی “بھینٹ” چڑھ بھی جائے تو اس میں‌ کوئی نقصان نہیں‌ ہے۔

اس دوران آپ کچھ نیا سیکھ سکیں گے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں