دنیا کے چند ایسے دہشت ناک مقامات جن کو دیکھ کر رونگٹے کھڑے ہوجائیں -
The news is by your side.

Advertisement

دنیا کے چند ایسے دہشت ناک مقامات جن کو دیکھ کر رونگٹے کھڑے ہوجائیں

دنیا بھر میں ایسے خوبصورت مقامات کی کمی نہیں جو دیکھنے والوں کو اپنے سحر میں جکڑ لیتی ہیں مگر کچھ ایسے مقامات بھی اسی کرہ ارض پر موجود ہیں جنہیں دیکھ کر کوئی بھی خوفزدہ اور دہشت میں مبتلاہوسکتا ہے، دنیا کے ایسے ہی چند دہشت ناک مقامات کی تصاویر دیکھ کر یقیناً آپ کی دلچسپی میں اضافہ ہوسکتا ہے اور یہ بھی ممکن ہے کہ یہ مناظر آپ کے دل کی دھڑکنیں تیز کردینے کا سبب بھی بنیں۔

آئیلا ڈی لاس میونکس، میکسیکو

گڑیاﺅں کا یہ جزیرہ پہلی نظر میں ہی دل پر دہشت طاری کردیتا ہے، جسے ایک کاشت کار نے اپنی چہیتی بیٹی کی یاد میں گڑیوں سے سجایا تاہم اس کی جانب سے اس جگہ کو خوبصورت بنانے کی کوشش ایک بھیانک خواب کی شکل اختیار کرگئی، اس کاشتکار نے سینکڑوں پرانی ڈولز جمع کیں جس میں سے بیشتر آنکھوں، سر اور دیگر اعضاءسے محروم تھیں۔

ہل آف کراسز، لتھوانیا

یہاں عیسائی فرقے کیتھولک سے تعلق رکھنے والے زائرین بہت زیادہ تعداد میں آتے ہیں، جو یہاں آکر صلیب کانشان چھوڑ جاتے ہیں تاکہ ان کی خواہشات پوری ہوسکیں مگر مقامی روایات کے مطابق یہاں سب سے پہلے صلیب ایک کسان نے لگائی تھی جس کی بیٹی بہت بیمار تھیاور وہ جلد شفایاب بھی ہوگئی، جس کے بعد سے یہ روایت بن گئی۔

 اوکیگھارا فوریسٹ، جاپان

یہ جاپان کا سب سے زیادہ آسیب زدہ مقام ہے جو ماﺅنٹ فیوجی کے بیس میں واقع ہے، اس علاقے میں گزشتہ پچاس برس کے دوران ہزاروں خودکشیاں کی جاچکی ہیں، انتہائی گھنے درختوں نے اس علاقے کو حد سے زیادہ پرسکوت بنا دیا ہے اور یہاں گم ہوجانا بہت آسان ہوتا ہے، کہا جاتا ہے کہ یہاں مشتعل روحیں گھومتی رہتی ہیں جو اسعلاقے میں گم ہو کر موت کا شکار ہوجانے والے افراد کی ہیں یا جنہوں نے خودکشیاں کیں۔

 گھوسٹ سٹی اورڈوس کانگبشی، چین

اس شہر کو بھوت قصبہ کہا جاتا ہے جو کہ بڑھتی آبادی کے لیے تعمیر کیا گیا تھا مگر زیادہ قیمتوں اور معاشی مسائل کے باعث بسایا نہیں سکا، مگر اب بھی بیس ہزار افراد یہاں رہائش پذیر ہیں مگر بیس لاکھ افراد کے لیے تعمیر کیے جانے والے اس شہر کو دیکھ کر لگتا ہے کہ یہ بالکل خالی ہے یا آسیب زدہ ہے۔

پائن بیریز، نیوجرسی

دس لاکھ ایکڑ پر پھیلے اس پراسرار پائن بیرنز نامی علاقے کو متعدد حلقوں میں ایک افسانوی حیثیت حاصل ہے جن کے خیال میں پروں والا ایک عفریت گھومتا رہتا ہے جو اس جنگل میں رات کو آنے والے بدقسمت افراد کی روحوںکا شکار کرتا ہے تاہم یہ مافیا اور قاتلوں کے لیے لاشیں چھپانے کے لیے بھی مقبول مقام بھی ہے۔

 اسپاٹڈ لیک، کینیڈا

یہ جھیل برٹش کولمبیا میں واقع ہے، جسے یہاں کے مقامی لوگ پراسرار قرار دیتے ہیں، اس کی عجیب شکلمیگنیشیم، سلور اور دیگر معدنیات کے اجتماع کا نتیجہ ہے اور یہاں سیاحوں کو مقامی قبائل کے لوگ پانی کے قریب جانے نہیں دیتے، اسی لیے تصاویر کافی دور سے لی جاتی ہیں۔

 کاسانکا بیٹ فوریسٹ، زیمبیا

ہر سال ہالووین کے موقع پر وسطی زیمبیا کا آسمان تاریک پڑجاتا ہے کیونکہ اسی (80) لاکھ بڑی فروٹ چمگادڑیںکانگو سے سالانہ ہجرت کرکے یہاں پہنچتی ہیں، ان کی آمد سے کاسانکا نیشنل پارک ہر طرف پرندوں کی پھڑپھڑاہٹ اور خون خشک کردینے والی آوازوں سے بھرجاتا ہے۔

پویجلیا آئی لینڈ، اٹلی

اس جگہ کے بارے میں روایات ہیں کہ یہ ایسے لوگوں کا مسکن تھا جو کہ طاعون کا شکار ہوکر موت کا شکار بنے، جس کے بعد ان کی روحیں تاحال یہاں بھٹکتی رہتی ہیں۔ یہاں ایک پاگل خانہ بھی تھا جو 1922 سے 1968 تک قائم رہا، جس کے بارے میں بھی افواہیں زیر گردش ہیں کہ وہاں ڈاکٹر مریضوں پر تجربات کرتے تھے جبکہ چیف ڈاکٹر پاگل ہوکر ٹاور سے کود گیا تھا، اس واقعے کے بعد سے یہ جزیرہ اب تک ویران پڑا ہے۔

 ہویا فوریسٹ، رومانیہ

رومانیہ میں تو برسوں سے ڈریکولا کی کہانیاں عام ہیں، مگر اس جنگل کو بھی ماورائی مقام سمجھا جاتا ہے، جس کی وجہ یہاں کے مقامی افراد کو خلائی طشتریاں اور دیگر عجیب وغریب واقعات نظر آنا ہے، ایسا مانا جاتا ہےکہ اس جنگل میں کچھ دیر رہنے واکوں کو الٹیاں، خارش اور سرچکرانے لگتا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔ 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں