The news is by your side.

Advertisement

شہرہ آفاق ادیب کی ایک عجیب عادت کا تذکرہ

شہرہ آفاق ادیب اور صحافی ارنسٹ ہیمنگوے کے بارے میں مشہور ہے کہ وہ کھڑے ہو کر لکھنے کے عادی تھے۔

اگر آپ ادب اور فنونِ لطیفہ کے شائق ہیں تو یقینا ہندوستان کے مشہور ادیبوں اور شاعروں کی بعض مخصوص عادات، ان کے لکھنے یا مطالعہ کرنے کے انداز اور تخلیقی سرگرمی انجام دیتے ہوئے کچھ خاص طور طریقوں پر عمل کرنے سے متعلق کئی باتیں پڑھی یا سنی ہوں گی۔ اسی طرح دنیا بھر کے تخلیق کاروں سے متعلق دل چسپ اور عجیب و غریب باتیں مشہور ہیں۔

ارنسٹ ہیمنگوے دنیا میں اپنے منفرد اسلوب اور ناول نگاری کی وجہ سے پہچانے جاتے ہیں۔

اس امریکی ناول نگار کے بارے میں مشہور ہے کہ وہ اپنا ٹائپ رائٹر اور پڑھنے کے بورڈ کو اتنا اونچا رکھتے تھے کہ وہ ان کے سینے تک پہنچتا تھا۔ یہ ان کے نزدیک لکھنے پڑھنے میں یکسوئی اور کام پر توجہ مرکوز رکھنے کے لیے ضروری ہوگا۔ تاہم بعض‌ تصاویر میں وہ کرسی پر بیٹھے ہوئے ہیں اور ان کی نظریں میز پر رکھے ان کے ٹائپ رائٹر پر جمی ہوئی ہیں۔ تاہم یہ دونوں ہی حالتیں اس ادیب کے لیے آرام دہ اور لکھنے پڑھنے پر توجہ برقرار رکھنے میں مددگار تھیں۔

یہ سن 61 کی بات ہے جب ارنسٹ ہیمنگوے نے خودکشی کی کوشش کی اور اپنے سَر میں گولی مار خود کو ہلاک کرلیا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں