The news is by your side.

Advertisement

پاکستانی فنکاروں کی حمایت، عالیہ بھٹ اور اُن کے والد کو قتل کی دھمکیاں

ممبئی: پاکستانی فنکاروں کی حمایت میں بیان دینے کے بعد بالی ووڈ فلموں کے مشہور ڈائریکٹر مہیش بٹ اور اُن کی اداکارہ بیٹی عالیہ بھٹ کو قتل کی دھمکیاں ملنے لگیں۔

پاکستانی فنکاروں کی حمایت میں بیان دینے والے مہیش بھٹ اور اُن کی بیٹی ایک بار پھر انتہاء پسندوں کے نشانے پر آگئے، ہندو انتہاء پسندوں نے معروف فلم ڈائریکٹر کو فون کر کے بھتہ طلب کیا اور ساتھ ہی بیٹی سمیت اُن کو قتل کرنے کی دھمکیاں بھی دیں۔

بھارتی میڈیا  کے مطابق گزشتہ دنوں مہیش بھٹ نے پاک بھارت تعلقات کے بعد پاکستانی فنکاروں کے ساتھ ہونے والے ظلم پر آواز بلند کی تھی اور ساتھ ہی اپنی نئی فلم میں پاکستانی فنکاروں کو موقع دینے کا اعلان بھی کیا تھا۔

پڑھیں: ’’ پاکستان کی حمایت پرنئی دہلی کے کالج کی طالبہ کو جان سے مارنے کی دھمکیاں ‘‘

مہیش بھٹ نے پریس کانفرنس میں کہا تھا کہ ’’فنکار  کی کوئی سرحد اور ملک نہیں ہوتا ، اُس کے مداح کسی بھی جگہ پر ہوتے ہیں جیسے ہندوستان میں کئی بھارتیوں کو فواد خان سمیت پاکستانی اداکار پسند ہیں اور پاکستان کے عوام کو ہمارے اداکار اچھے لگتے ہیں‘‘۔

انہوں نے ہندو انتہاء پسندوں کو نشانہ بناتے ہوئے اعلان کیا تھا کہ اب وہ کسی دباؤ میں آئے بغیر فلم بنائیں گے اور اُس میں بھارتی فنکاروں کے ساتھ پاکستانی فنکاروں کو بھی موقع دیں گے۔

مزید پڑھیں: ’’ انتہا پسندوں بھارتیوں کی دھمکیاں، عاطف اسلم کا کنسرٹ منسوخ ‘‘

اس اعلان کے بعد انتہاء پسند مہیش بھٹ کے خلاف متحرک ہوگئے اور انہوں نے عالیہ بھٹ اور اُن کے والد کو قتل کی دھمکیاں دیں اور پریس کانفرنس کے عوض بھاری رقم بھی طلب کی ہے۔

مہیش بھٹ نے ہندو انتہاء پسندوں کی جانب سے ملنے والی دھمکیوں سے متعلق مودی حکومت کو آگاہ کرتے ہوئے سیکیورٹی فراہم کرنے کی درخواست دائر کردی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں