site
stats
پاکستان

پنجاب اسمبلی: سکھ برادری کی شادیوں کو قانونی حیثیت دینے کے لیے بل پیش

لاہور: صوبہ پنجاب کی اسمبلی میں سکھ برادری کو شادی کرنے کا قانونی اختیار دینے کے لیے بل پیش کردیا گیا۔ قانون کی منظوری کے بعد پاکستان دنیا کا پہلا ملک بن جائے گا جہاں آباد سکھ اقلیت اپنے مذہب کے مطابق رشتہ ازدواج میں منسلک ہوسکے گی۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب اسمبلی میں سکھ رکن سردار رامیش سنگھ آروڑہ کی جانب سے سکھوں کو شادی کرنے کے قانونی اختیار کے حوالے سے سکھ میرج ایکٹ بل پیش کردیا گیا۔

ایوان سے باہر گفتگو میں سردار رامیش سنگھ آروڑہ کا کہنا تھا کہ اس قانون سازی سے پاکستان دنیا کا پہلا ملک بن جائے گا جہاں آباد سکھ اقلیت اپنے مذہب کے مطابق رشتہ ازواج میں منسلک ہو سکے گی۔

پاکستان مسلم لیگ ن سے تعق رکھنے والے رامیش سنگھ پنجاب اسمبلی کے پہلے سکھ رکن ہیں۔

دوسری جانب قائد حزب اختلاف میاں محمود الرشید نے پنجاب اسمبلی میں متحدہ اپوزیشن کے اجلاس کے بعد اعلان کرتے ہوئے کہا کہ مالی بے ضابطگیوں کے اسکینڈل کو پوری شدت کے ساتھ ایوان میں اٹھایا جائے گا۔ حکومت کو مجبور کریں گے کہ اس پر بحث کے لیے 2 روز مختص کیے جائیں۔

اجلاس میں حکومتی رکن نگہت ناصر کی جانب سے صوبے بھر میں عطائیت، تعویز گنڈے اور جادو ٹونے کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاﺅن کرنے کی قرارداد کو بھی کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top