The news is by your side.

Advertisement

ہالینڈ میں خواتین کے نقاب پہننے پرپابندی عائد

ایمسٹرڈیم: ہالینڈ میں خواتین کے نقاب پہننے پرپابندی عائد کردی گئی، جس کے بعد خواتین اب پبلک مقامات پرنقاب استعمال نہیں کرسکیں گی۔

تفصیلات کے مطابق ہالینڈ میں بھی مسلمان متعصبانہ رویے کا شکار ہے، جہاں خواتین کےنقاب لینے پرپابندی لگا دی گئی، سینٹ نے خواتین کے نقاب پرپابندی کا بل منظورکرلیا، جس کے بعد اب اسکولوں، پارکوں، اسپتالوں اور دیگر پبلک مقامات پرخواتین نقاب نہیں پہن سکیں گی۔

ڈچ حکام کا کہنا ہے کہ نقاب پرپابندی کا فیصلہ دہشت گردی کے خاتمے کے لیے کیا گیا جبکہ ہیلمٹ،ماسک اوردیگرچہرہ چھپانے والی چیزوں کے عمارتوں میں استعمال پر بھی پابندی ہوگی تاہم ہیلمٹ کا استعمال گلیوں میں کیا جا سکے گا۔

یاد رہے کہ ڈنمارک کی پارلیمنٹ نے نقاب اور برقعے پر پابندی کا قانون منظور کرلیا، پابندی کے حق میں 75 جبکہ مخالفت میں 30 سے زائد ووٹ آئے، 74 نے رائے شماری میں حصہ نہیں لیا تھا۔


مزید پڑھیں :  ڈنمارک میں نقاب پر پابندی عائد کردی گئی


ڈنمارک میں پابندی کا اطلاق یکم اگست سے ہوگا، ایک بار خلاف ورزی پر 150 ڈالر جرمانہ عائد کیا جائے گا، جبکہ چار بار خلاف ورزی کی گئی تو ڈبل جرمانہ ادا کرنا ہوگا۔

واضح رہے کہ اس سے قبل آسٹریا، فرانس اور بیلجیم سمیت دیگرتیرہ ممالک بھی اسی طرح کا قانون منظور ہوچکا ہے اوراب ہالینڈ بھی ان ممالک کی صف میں شامل ہوگیا ہے، جہاں خواتین کے برقعہ پہننے پر پابندی عائد ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں