The news is by your side.

Advertisement

ہولی: ’پاکستان میں مذہبی رسومات ادا کرنے کی مکمل آزادی ہے‘

سکھر: غلام محمد مہر میڈیکل کالج کے طالب علموں نے ہولی منائی اور خوب ہلہ گلہ کیا۔ ایک طالبہ کا کہنا تھا کہ پاکستان وہ ملک ہے جہاں مذہبی رسومات ادا کرنے کی مکمل آزادی ہے۔

تفصیلات کے مطابق دنیا بھر میں آج ہندو مذہب سے تعلق رکھنے والوں نے ہولی کا مذہبی تہوار عقیدت و احترام سے منایا۔ پاکستان میں بسنے والے ہندوؤں نے بھی اپنی خصوصی عبادات اور ایک دوسرے پر رنگ پھینکے کر مسرت کا اظہار کیا۔

سکھر کے غلام مہر میڈیکل کالج میں طالب علموں نے ہولی کی تقریب کا خصوصی اہتمام کیا جس میں طلبہ نے بڑی تعداد میں شرکت کی اور خوب ہلہ گلہ کیا۔

اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے ایک طالبہ کا کہنا تھا کہ ’پاکستان ایک ایسا ملک ہے جہاں ہر مذہب سے تعلق رکھنے والا شخص اپنی فیسٹیول کو منا سکتا ہے، جیسے مسلمان عید جوش و خروش سے مناتے ہیں اُسی طرح ہم ہولی بھی آزادی اور جوش و خروش سے مناسکتے ہیں‘۔

مزید پڑھیں: وزیراعظم عمران خان کی ہندو برادری کو ہولی کی مبارک باد

ایک اور طالب علم کا کہنا تھا کہ ’فیسٹیول میں مسلمان، ہندو، عیسائی تمام مذاہب کے لوگ شامل ہیں اور سب ہی مل کر ہولی منار رہے ہیں‘۔

وزیر اعظم سمیت معروف شخصیات کی مبارک باد

وزیر اعظم نے ایک پیغام جاری کیا جس میں انہوں نے ہندو برادری کو ہولی کی مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ ’ہولی امن و مسرت سے مزین رنگوں کا تہوار ہے‘۔

ڈپٹی چیئرمین سلیم مانڈوی والا نے ہندو برادری کو مبارک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ ’قائد اعظم کے پاکستان میں تمام مذاہب کو مکمل آزادی حاصل ہے‘۔

وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے  ہولی کے تہوار پر ہندو برادری کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ ’ہولی کا تہوار بھائی چار اور خیر سگالی کے جذبات کو فروغ دیتا ہے، پاکستان میں تمام اقلیتوں کو مکمل تحفظ اور مذہبی آزادی حاصل ہے‘۔ ترجمان دفترخارجہ کی جانب سے بھی ہولی کی مبارکباد دی گئی۔

پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو اور سابق صدر آصف زرداری نے ہولی پر مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ ’آئین ہولی کے موقع پر امن اور خوشی کا پیغام عام کریں، ہمارا دین مذہبی آزادی کا درس دیتا ہے‘۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں