The news is by your side.

Advertisement

برف کا گھر بنانے والے بچے کے ساتھ خوفناک واقعہ

ٹراسپ : سوئٹزرلینڈ میں اپنے ہاتھوں سے بنائے ہوئے اگلو (برف سے بنے گھر) کے گرنے سے باپ بیٹا دب گئے، باپ نے کوشش کرکے اپنی جان بچالی لیکن وہ سات سالہ بیٹے کو نہ بچا سکا۔

تفصیلات کے مطابق مشرقی سوئٹزرلینڈ کی ریاست گربوینن کے برفانی علاقے ٹراسپ میں ایک اندوہناک حادثہ پیش آیا ہے جس میں اپنے ہاتھ سے بنایا ہوا اگلو (برف کا گھر) گرنے سے باپ بیٹا برف میں دب گئے۔

اس حوالے سے سوئس پولیس کا کہنا ہے کہ حادثہ گزشتہ روز صبح 11بجے پیش آیا جب برف سے بنا گھر اچانک گرگیا۔ پولیس کے مطابق حادثے کے وقت دونوں اندر موجود تھے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق حادثے کے بعد لڑکے کے والد نے انتہائی کوششوں کے بعد خود کو تو کسی طرح برف کے ڈھیر سے باہر نکال لیا لیکن وہ کافی دیر تک اپنے سات سالہ بیٹے کی جان بچانے کیلئے اسے ڈھونڈتا رہا۔

بعد ازاں ایک شخص کے آنے پر بچے کو تلاش کرلیا گیا اس دوران 15منٹ کا وقت گزر چکا تھا۔ بعد ازاں امدادی ٹیم نے بھی بچے کو ہوش میں لانے کی کوشش کی لیکن ناکامی کا سامنا کرنا پڑا۔

بچے کو انتہائی تشویشناک حالت میں اسپتال لے جایا گیا تاہم وہ دوران علاج ہی چل بسا۔ پولیس حادثے کی تحقیقات کررہی ہے جبکہ بچے کے والد اور دیگر اہل خانہ کی دیکھ بھال بھی کی جارہی ہے۔

سوئس پولیس کا کہنا ہے کہ اس طرح کے کھیلوں کی سرگرمیاں جیسے کسی کو ریت دبانا یا اگلوز تعمیر کرنا بہت خطرناک ہوسکتا ہے لہٰذا اس میں انتہائی احتیاط کی ضرورت ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں