The news is by your side.

Advertisement

برطانیہ میں گرمی کی لہر بچوں اور عمر رسیدہ افراد کے لیے خطرناک قرار

لندن: گرمی کی ایک لہر برطانیہ بھر میں سر اٹھا رہی ہے، درجہ حرارت 32 ڈگری سینٹی گریڈ تک جانے کا امکان ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق گرمی کی ایک لہر برطانیہ میں پھیل رہی ہے جو کہ اس سال گرم ترین درجہ حرارت کا سبب بن سکتی ہے، درجہ حرارت 32 ڈگری سینٹی گریڈ تک جانے کا امکان ہے۔

برطانوی میٹ آفس کے مطابق گرمی کے باعث مضافاتی ساحل سمندر کے مقامات پر رش دیکھا گیا ہے، بچوں، عمر رسیدہ افراد کو گرمی کی لہر سے زیادہ خطرہ ہے۔ چند ہفتوں بعد پر گرمی میں کمی کا امکان ہے۔

میٹ آفس فورکاسٹر مارک فوسٹر کا کہنا ہے کہ برطانیہ کے تمام حصوں میں سال کا گرم ترین دن اس ہفتے آئے گا، یہ حقیقتاً ایک اچھا موقع ہوگا کہ ہم سال کا گرم ترین دن دیکھ سکیں گے یہ ممکنہ طور پر آج بھی ہوسکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ گرمی کی بڑھتی ہوئی شدت کا مطلب یہ ہے کہ تب کاہی کے مرض میں مبتلا افراد کے لیے یہ مشکل وقت ہوگا۔

میٹ آفس کے مطابق اس سال برطانیہ بھر میں زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 19 اپریل کو سینٹ جیمس پارک، سینٹرل لندن میں 29.1 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا تھا۔ْ

دوسری جانب روز اینڈ کرومانی، اسکاٹ لینڈ میں اچناگرٹ پر درجہ حرارت 27.5 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جبکہ کوٹائرون مین کیسل ڈرگ میں 25.3 ڈگری سینٹی گریڈ سال کا زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں