The news is by your side.

Advertisement

حوثی باغیوں کا ایک بار پھر سعودی عرب پر میزائل حملہ

ریاض: سعودی عرب میں واٹر ڈیسیلی نیشن پلانٹ کے نزدیک حوثیوں نے میزائل داغا تاہم اس حملے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

تفصیلات کے مطابق یمن مین آئینی حکومت کے حامی عرب اتحاد کی فورسز کے سرکاری ترجمان کرنل ترکی المالکی نے بتایا ہے کہ حوثیوں کی جانب سے داغا جانے والا ایک میزائل سعودی عرب کے شہر الشقیق میں واٹر ڈیسیلی نیشن پلانٹ کے قریب آ کر گرا، تاہم واقعے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ترجمان نے بتایا کہ عسکری اور سیکورٹی ادارے حملے میں استعمال کئے جانے والے میزائل کی نوعیت متعین کرنے پر کام کر رہے ہیں۔

کرنل ترکی المالکی نے کہا کہ شہری تنصیبات کو نشانہ بنانا جنگی جرم کے برابر ہے، دہشت گرد حوثی ملیشیا کا اعتراف اس بات کا ثبوت ہے کہ اسے جدید نوعیت کا اسلحہ مل رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایرانی نظام کی جانب سے حوثیوں کو اس دہشت گردی کے سلسلے میں پوری حمایت حاصل ہے، اسی بنا پر وہ سلامتی کونسل کی متعلقہ قرار دادوں 2216 اور 2231 کی مسلسل خلاف ورزی کر رہے ہیں۔

عرب اتحاد کے ترجمان کے مطابق دہشت گرد حوثی ملیشیا مختلف نوعیت کے ہتھیاروں کی اسمگلنگ کے لئے الحدیدہ کی بندرگاہ کو استعمال کر رہی ہے جس کے سبب علاقائی اور بین الاقوامی امن خطرے میں پڑ گیا ہے۔

حوثی باغیوں کو سعودی عرب پر حملوں کا حساب دینا ہوگا، شہزادہ خالد بن سلمان

انہوں نے باور کرایا کہ عرب اتحاد کی مشترکہ قیادت اس دہشت گرد ملیشیا کو منہ توڑ جواب دینے کےلئے سخت اور فوری اقدامات کرے گی تا کہ شہریوں اور شہری تنصیبات کا تحفظ یقینی بنایا جا سکے۔

المالکی کا مزید کہنا تھا کہ اس نوعیت کی دہشت گرد کارروائیوں کی منصوبہ بندی اور اس پر عملدرآمد کے ذمے دار دہشت گرد عناصر کا کڑا احتساب کیا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں