The news is by your side.

Advertisement

’یونیورسل کنٹرول‘ ایپل نے نیا آپشن متعارف کروادیا

ایپل نے یونیورسل کنٹرول کے نام سے نیا آپشن متعارف کروادیا جسے پر تجزیہ کاروں نے حیرت اور خوشی کا اظہار کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایپل نے ایک ہی وقت میں دو آلات کو باہم منسلک کرکے حقیقی وقت میں دونوں کا ایک ڈیوائس سے کنٹرول اور فائل شیئرنگ کا وہ آپشن پیش کردیا ہے جس کا انتظار کیا جارہا تھا۔

ایپل نے ایک سال قبل اس کا اعلان کیا تھا جسے “یونیورسل کنٹرول” کا نام دیا گیا ہے۔

sys prefs

فی الحال یہ آپشن میک اوایس مونٹیرے 12.3 اور 15 سے اوپر کے آئی پیڈ او ایس ورژن پر چل سکے گا۔ اس طرح اب کسی بھی سافٹ ویئر ، بلیو ٹوتھ یا وائرلیس رابطے کے بغیر ایپل لیپ ٹاپ اور ٹیبلٹ کو باہم منسلک کیا جاسکتا ہے۔ ہاں اسے کے لیے ایپل کے ایئرڈراپ کی بھی قطعاً کوئی ضرورت نہیں ہوگی۔

بس یہ کرنا ہوگا کہ دونوں آلات پر یکساں آئی ڈی سے رجسٹر ہوں جیسا کہ عام طور پر ہوتا ہے۔ خیال رہے کہ ورژن اپ ڈیٹ ہوں اور وہ بھی ہم ونڈوز کی طرح اپ ڈیشن سے گزرتے رہتے ہیں۔ فی الحال ایپل ڈویلپر کی انرولمنٹ درکار ہے لیکن بعد میں اس کی ضرورت بھی نہیں رہے گی۔

sys prefs

وجہ یہ ہے کہ جلد ہی (غالباً کچھ ماہ بعد) کے ماڈل میں یہ ڈیفالٹ فیچر کے طور پر شامل ہوگا۔ اب دونوں آلات کو دیکھیں اور کسی ایک کے کی پیڈ کرسرسے فائلیں ڈراپ کریں جو ڈیسک ٹاپ پر دکھائی دیں گی۔ یوں آئی میک کا ڈیٹا آئی پیڈ پر اور آئی پیڈ کی تصاویر چٹکی بجاتے ہی آئی میک پر منتقل ہوتی رہیں گی۔

اب ایپل ڈیولپر کی انرولمنٹ کو ذہن میں رکھتے ہوئے یہ آلات دیکھیں جن پر یونیورسل کنٹرول اس وقت بھی چلایا جاسکتا ہے۔ پہلے لیپ ٹاپ کی بات ہو تو 2016 یا اس کے بعد کی میک بک پرو، اسی دور کی سادہ میک بک، 2018 یا اس کے بعد کا میک بک ایئر، 2017 یا اس کے بعد کا آئی میک سسٹم، آئی میک 5کے ریٹینا، آئی میک پرو، اور دیگر منی ورژن شامل ہیں۔

universal control

جہاں تک ٹیبلٹ یا آئی پیڈ کا تعلق ہے تو آئی پیڈ پرو، تھرڈ جنریشن یا اس کے بعد کا آئی پیڈ ایئر، سکس جنریشن آئی پیڈ، اور دیگر آلات شامل ہیں، ان آلات کو ایپل کلاؤڈ پر رجسٹر ہونا ضروری ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں