The news is by your side.

Advertisement

امریکی کرونا ویکسین کیسے استعمال ہوگی؟

واشنگٹن: امریکا میں کرونا وائرس کے حملے سے بچاؤ کے لیے ویکسین تیار ہو گئی ہے، اگرچہ فی الوقت آخری مرحلہ باقی ہے، یعنی اس کے استعمال کے لیے ایف ڈی اے سے منظوری، تاہم یہ بھی بتایا گیا ہے کہ منظوری کے بعد اس کا استعمال کس طرح شروع ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق کرونا وائرس سے بچاؤ کی ویکسین پہلے مرحلے میں ہائی رسک گروپ کو دی جائےگی، جس میں ہیلتھ کیئر ورکرز، اساتذہ، اور فوڈ ورکرز شامل ہیں، بزرگ یا بیمار افراد کو بھی ویکسین ترجیحی بنیادوں پر دی جائے گی۔

لوگوں کو کرونا ویکسین کے 2 شاٹ دیے جائیں گے، فائزر ویکسین کے دونوں شاٹس کے درمیان 3 ہفتے کا وقفہ ہوگا، جب کہ موڈرنا کے دونوں شاٹس 4 ہفتوں کے وقفے سے لگائے جائیں گے۔

واضح رہے کہ کرونا وائرس کے خلاف 9 نومبر کو فائزر اور بایو این ٹیک کمپنی نے ویکسین کے 90 فی صد سے زائد جب کہ 16 نومبر کو موڈرنا کمپنی نے ویکسین کے 95 فی صد مؤثر ہونے کا اعلان کیا تھا۔

یہ دوا ساز کمپنیاں اب کرونا ویکسین کے استعمال کے لیے امریکی فوڈ اینڈ ڈرگ ریگولیٹری سے منظوری حاصل کریں گی، ایف ڈی اے جائزہ لینے کے بعد دسمبر تک ایک یا دونوں ویکسینز کے استعمال کی منظوری دے گی، جب کہ دسمبر 2020 تک فائزر اور موڈرنا کی ویکسینز کی 40 ملین خوراکیں 20 ملین افراد کے لیے مہیا ہوں گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں