The news is by your side.

Advertisement

مودی سرکار شاہ رخ خان کی ڈاکٹریٹ کی ڈگری میں رکاوٹ بن گئی

نئی دہلی: مسلمانوں‌ کے‌ خلاف مودی سرکار کی انتہاپسندانہ سوچ عروج پر پہنچ گئی ہے، بھارتی حکومت نے اداکار شاہ رخ خان کو ڈاکٹریٹ کی اعزازی ڈگری دینے کی اجازت دینے سے انکار کردیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق نئی دہلی کی جامعہ ملیہ یونیورسٹی نے ڈاکٹریٹ کی اعزاز ڈگری دینے کی درخواست کی تھی جسے مودی سرکار نے رد کردیا، مودی سرکار کا کہنا تھا کہ شاہ رخ خان اس سے قبل بھی ایک اور جامعہ کی ڈاکٹریٹ کی اعزازی سند حاصل کرچکے ہیں۔

شاہ رخ خان جامعہ ملیہ میں زیر تعلیم رہ چکے ہیں جامعہ ملیہ یونیورسٹی انتظامیہ نے اعزازی ڈگری کے لیے کنگ خان کے نام کی منظوری لینی تھی۔

رپورٹ کے مطابق بھارت میں ایسا کوئی اصول نہیں ہے کہ ایک ہی شخص کو ایک سے زائد بار اعزازی ڈگری سے نہیں نوازا جاسکتا، اس سے قبل بھی بھارتی سیاست دان ای این آر راؤ ایم ایس سوامی کو کئی بار اعزازی سند سے نوازا جاچکا ہے۔

مزید پڑھیں: نریندر مودی نے اپنی تعریفیں کرانے کے لیے بولی ووڈ اسٹارز کو کرائے پر لے لیا، بھارتی میڈیا

واضح رہے کہ شاہ رخ خان جامعہ ملیہ اسلامیہ کے شعبہ ابلاغ عامہ میں ماسٹر ڈگری کے سابق طالب علم تھے لیکن وہ کم حاضری کی وجہ سے فائنل امتحان نہیں دے سکتے تھے۔

خیال رہے کہ پلوامہ خودکش حملے میں 46 بھارتی فوجیوں کی ہلاکت کے بعد سے مودی سرکار بوکھلاہٹ کا شکار ہے کنگ خان سے قبل مودی سرکار نے پاکستانی فنکاروں کے بھارتی فلموں میں کام کرنے پر پابندی عائد کردی تھی۔

بھارت میں موجود کشمیری طلبا اور مسلمانوں پر بھی انتہا پسندوں کی جانب سے حملے کیے جارہے ہیں جبکہ مودی سرکار خاموش تماشائی بنی ان سب مظالم کو دیکھ رہی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں