دنیا کا ایسا گاؤں، جہاں ہر شخص کروڑ پتی -
The news is by your side.

Advertisement

دنیا کا ایسا گاؤں، جہاں ہر شخص کروڑ پتی

بیجنگ: چین میں ایک گاؤں جیسے دنیا کا امیر ترین گاؤں” کہا جاتا ہے، اس گاؤں کی خاص بات یہ ہیں کہ یہاں کا ہر شخص کروڑ پتی ہے۔

چین کے مشرقی صوبہ جیانگسو میں واقع ہواسی نامی گاؤں جہاں دو ہزار مکینوں میں ہر شخص کے اکاؤنٹ میں ایک ملین یوآن یعنی 15 کروڑ پاکستانی روپے موجود ہیں۔

1236

12

c8

اس گاؤں کی دلچسپ بات یہ ہے کہ یہاں ہر خاندان کو منتقلی پر حکومت کی طرف سے گاڑی اور بنگلہ ملتا ہے لیکن اگر آپ گاؤں چھوڑ کر گئے تو سب کچھ واپس لے لیا جائے گا۔

c5

c4

فلک شگاف عمارت، ہیلی کاپٹر، ٹیکسیاں، ایک تھیم پارک اور خوبصورت گھر اگر اس کو دنیا کا سب سے خوبصورت گاؤں کہا جائے تو غلط نہ ہوگا۔

c15

شہر کے داخلی دروازے پر”آسمان تلے نمبر ایک گاؤں میں خوش آمدید لکھا ہے،اس کا انتظام جیانگ ین شہر کی انتظامیہ کے پاس ہے جو اپنے زرعی وسائل اور خوبصورت مناظر کی وجہ سے معروف ہے۔

11

c11

c13

جب گاؤں نے 2003ء میں سالانہ اقتصادی حجم 100 ارب یوآن تک پہنچنے کا اعلان کیا تو یہ توجہ کا مرکز بنا اور ایک سال بعد ہی ہواسی نے اعلان کیا کہ اس کے مکینوں کی اوسط سالانہ تنخواہ ایک لاکھ 22 ہزار 600 یوآن ہے۔

c12

جس کے بعد 2011 میں گاؤں نے تین ارب یوآن کی لاگت سے ایک 72 منزلہ بلند عمارت بنائی، جو ہواسی کا معلق گاؤں کہلاتی ہے۔ عمارت 1076 فٹ بلند ہونے کے ساتھ ساتھ ایفل ٹاور سے بھی زیادہ اونچی ہے۔

12364

c6

عمارت کے اندر ایک ‘سپر فائیو اسٹار’ لانگ وش انٹرنیشنل ہوٹل بھی ہے، 826 کمروں پر مشتمل اس ہوٹل میں ایک جگہ ایسی بھی ہے جس کا ایک رات کا کرایہ ہی ایک لاکھ یوآن ہے جبکہ 60 منزل پر موجود اس قیام گاہ کے ساتھ بیل کا ایک مجسمہ جو ایک ٹن خالص سونے سے بنایا گیا ہے، جسے دیکھ کر لوگ حیران رہ جاتے ہیں۔

c1

سالوں تک ہواسی کو چین کی کمیونسٹ حکومت کی کامیابی کی علامت کے طور پر پیش کیا جاتا رہا ہے جس نے ایک غریب گاؤں کو نصف صدی میں خطے کا سب سے امیر علاقہ بنا دیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں