The news is by your side.

Advertisement

متحدو قومی موومنٹ کے رہنماؤں کی تادم مرگ بھوک ہڑتال جاری

کراچی : متحدہ قومی موومنٹ کے رہنماؤں کی کراچی پریس کلب کے باہر کارکنان و ہمدردوں کی گرفتاریوں اور انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کے خلاف تادمِ مرگ بھوک ہڑتال جا ری ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی کے مشترکہ اجلاس میں کارکنان کی بلاجواز گرفتاریوں اور چھاپوں کے خلاف تادمِ مرگ بھوک ہڑتال کا فیصلہ کیا گیا تھا جس کے پہلے مرحلے میں تادم ِ بھوک ہڑتال پر ایم کیوایم کی رابطہ کمیٹی کے ارکان اسلم آفریدی، ذاکر قریشی،حق پرست رکن سندھ اسمبلی یوسف شاہوانی ، ایم کیوایم سینٹرل ایگزیکٹو کونسل کے رکن رفیع اکبر،متحدہ آرگنائزنگ کمیٹی کے ارکان اسد اللہ خان اور وسیم احمد ترک 17اگست 2016بروزبدھ کی شب 8 بجے بیٹھے تھے اور انہیں بھوک ہڑتال پر بیٹھے ہوئے جمعرات دوپہر12بجے تک 17گھنٹے ہوچکے ہیں۔

اس موقع پر ایم کیوایم کی رابطہ کمیٹی کے اراکین محمد حسین ، رکن الدین تاج ، فیض محمد فیضی ، اکرم راجپوت ، ساتھی اسحاق سمیت حق پرست اراکین قومی وصوبائی اسمبلی، خواتین ، ایم کیوایم کے ذمہ داران و کارکنان کی بڑی تعداد موجود تھی ۔تادم مرگ بھوک ہڑتال کے دوسرے دن رابطہ کمیٹی کے اراکین نے بھوک ہڑتال پر بیٹھے ہوئے افراد کو پھولوں کے ہار پہنائے اور ان کے جذبے اور ہمت کو سراہا۔

اسی سے متعلق : کارکنان کی گرفتاریوں کے خلاف ایم کیو ایم کی تادمِ مرگ بھوک ہڑتال

کل رات گئے بھوک ہڑتال کے آغاز کے موقع پرمتحدہ قومی موومنٹ کے رہنما ڈاکٹر فاروق ستار کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم نے مہاجروں کے سیاسی،معاشی، سماجی،جسمانی قتل عام کے خلاف تادم مرگ بھوک ہڑتال کا آغازکیا ہے۔

Post-mqm

ڈاکٹر فاروق ستار کا مزید کہنا تھا کہ ’’اس سے قبل بھی ہم نے دو روزہ بھوک ہڑتال کی مگر کسی ادارے یا جماعت نے اُس کی وجہ نہیں پوچھی تا ہم اس بار جب تک مہاجروں کے خلاف ظلم، جبرو ناانصافی کا سلسلہ جاری رہے گا ہم اسی طرح بھوک ہڑتال پر بیٹھے رہیں گے۔

Post2-mqm

واضح رہے گزشتہ ماہ ایم کیو ایم کراچی کے دس ٹاؤن میں کارکنان کی تربیت نشستوں کا اہتمام کیا گیا تھا جس سے قائد ایم کیو ایم نے خطاب کرنا تھا تا ہم عین موقع پرپولیس نے پہنچ کر جلسہ گاہ کو سبوتاژ کیا اورکارکنان کو گرفتارکرکے لے گئے تھے۔

اسی طرح منگل کی شب گلستان جوہر کے ٹاؤن آفس (سابقہ سیکٹرآفس) میں جاری قرآن خوانی کے موقع پر رینجرز کی جانب سے چھاپے مارے گئے اور خواتین سمیت کارکنان کو گرفتار کر لیا گیا تھا جس کے بعد ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی پاکستان اور لندن میں ہنگامی اجلاس میں ٹی او آر کمیٹی سے علیحدگی اور تادم مرگ ہڑتال کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں