The news is by your side.

Advertisement

جہیز کے بدلے لالچی شوہر نے دھوکے سے اہلیہ کا گردہ ہی فروخت کردیا

نئی دہلی : جہیز نہ لانے پر شوہر نے دھوکہ دہی کے ذریعے اہلیہ کا گردہ نکلوا کر فروخت کردیا.

تفصیلات کے مطابق مغرقی بنگال کے رہائشی لالچی شوہر نے چند روپوں کی خاطر اپینڈکس کے آپریشن کا بہانہ بنا کر اپنی اہلیہ کا گردہ نکال کر فروخت کردیا تاہم دو سال بعد حقیقت معلو ہونے پر 28 سالہ ریتا سرکار نے اپنے شوہر کے خلاف مقدمہ درج کرادیا.

پولیس نے مقدمہ درج کرنے کے بعد شوہر اور دیور کو حراست میں لے لیا ہے اور دھوکہ دہی، غیر قانونی طور پر گردے کی فروخت اور جہیز طلب کرنے کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے.

ریتا کماری نے پولیس کو دیئے گئے بیان میں بتایا کہ میری شادی 2008 میں ہوئی تھی جس کے بعد سے اب تک میرا شوہر جہیز زیادہ نہ لانے پر طعنے دیا کرتا تھا اور مجھے کبھی کبھی تشدد کا بھی سامنا کرنا پڑتا تھا.

ریتا کماری نے مزید بتایا کہ دو سال قبل میرے پیٹ میں شدید درد اُٹھا جسے اپینڈکس کا درد بتا کر میرے شوہر اور دیور نے آپریشن کرانے کی غرض سے اسپتال میں داخل کرایا اور اہل خانہ میں سے کسی کو آپریشن سے متعلق آگاہ کرنے سے منع کردیا.

ریتا کماری کے والد کا کہنا تھا کہ چند روز قبل بیٹی کی طبعیت ناساز ہوئی تو مقامی اسپتال لے کر گئے جہاں انکشاف ہوا کہ ریتا کا گردہ نکالا جا چکا ہے جس پر ہم دو سال قبل اپینڈکس کا آپریشن جہاں ہوا تھا وہاں گئے لیکن کوئی سنوائی نہیں ہوئی.

ریتا کماری کے والد کا مزید کہنا تھا کہ شادی کے وقت میں نے بیٹی کو ایک لاکھ اسی ہزار نقد اور اپنی حیثیت کے مطابق سونا اور چاندی دیا تھا لیکن لالچی داماد اور اس کے گھر والوں اسے ناکافی قرار دیتے ہوئے بیٹی پر تشدد کا سلسلہ جاری رکھا ہوا تھا.

خیال رہے کہ بھارت میں جہیز کی نہ ختم ہونے والی لعنت نے ہزاروں خواتین کی جان لے لی ہے اور سسرال والوں کے تشدد سے کئی خواتین کے زخمی ہونے کی اطلاعات آئے دن موصول ہوتی رہتی ہیں.


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں