The news is by your side.

Advertisement

پاناماکی جےآئی ٹی میں حسین نواز پانچویں بار پیش

اسلام آباد: وزیر اعظم کے بڑے صاحبزادے حسین نواز فیڈرل جوڈیشل اکیڈمی اسلام آباد میں جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق پاناما کیس میں تحقیقات کیلئے بنائی گئی جے آئی ٹی کی تفتیش کا سلسلہ جاری ہے ، وزیراعظم کے صاحبزادے حسین نواز فیڈرل جوڈیشل اکیڈمی پہنچے اور پانچویں بار جےآئی ٹی کے سامنے پیش ہوئے، اس موقع پر جوڈیشل اکیڈمی کے باہر ن لیگ کے کارکنان بھی موجود تھے۔

حسین نواز نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ جےآئی ٹی پر سوالات اٹھ رہے ہیں،تصویر لیک ہونے کی تحقیقات ہونی چاہیں۔

یاد رہے کہ حسین نواز نے پیشی کے دوران اپنی تصویر لیک ہونے کی ذمہ دار جے آئی ٹی پر عائد کرتے ہوئے سپریم کورٹ میں درخواست جمع کرادی ہے۔


تصویر کیوں لیک ہوئی؟ حسین نواز سپریم کورٹ پہنچ گئے


وزیراعظم کے صاحبزادے حسین نواز نے چوتھی پیشی پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ نواز شریف نے ہمیشہ قانون کی پاسداری کا درس دیا ہے اور قانون و اداروں کے تقدس کے لیے جان کی بازی بھی داؤ پر لگائی ہے۔

انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ اور عوام تک سچ پہنچانے کے لیے اگر جے آئی ٹی دوبارہ بھی بلائے گی تو ضرور آؤں گا۔


مزید پڑھیں : حسن نواز جے آئی ٹی پیشی کے بعد میڈیا سے بات کیے بغیر روانہ


گذشتہ روز وزیر اعظم کے چھوٹے صاحبزادے حسن نواز دوسری بار جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوئے تھے، جن سے پانچ گھنٹے تک تفتیش کی جاتی رہی تاہم وہ بعد میں میڈیا سے گفتگو کیے بغیر ہی واپس روانہ ہو گئے ۔

جے  آئی ٹی نے حسن نواز کو 10جون اور حسین نواز کو 9جون طلب کیا تھا لیکن جے آئی ٹی کی کارروائی کا شیڈول حسن نواز کی درخواست پر تبدیل کیا گیا اور حسن نواز کو گزشتہ روز طلب کیا گیا تھا۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئرکریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں