پاکستان میں پہلی بار بیٹری سے چلنے والا رکشہ متعارف Hybrid rickshaw
The news is by your side.

Advertisement

پاکستان میں پہلی بار بیٹری سے چلنے والا رکشا متعارف

کراچی : پاکستان میں پہلی بار بیٹری سے چلنے والا (ہائبرڈ) رکشا متعارف کرادیا گیا، اس رکشا میں 25 کلومیٹر کی رفتار تک ایندھن کا استعمال نہیں ہوتا، رکشا میں وائی فائی کی سہولت بھی دستیاب ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی ایکسپو سینٹرمیں منعقدہ تین روزہ آٹو پارٹس شو میں پاکستانی کمپنی گرین وہیلز پرائیویٹ لمیٹڈ کی جانب سے دو سو سی سی چینی ہائبرڈ رکشا متعارف کرایا گیا ہے۔

مذکورہ رکشے کو مقامی طور پر تیار کیا گیا ہے، کمپنی حکام کا کہنا ہے کہ رکشا 200 سی سی کے ساتھ 4 کلو واٹ گھنٹے کی الیکٹرک پاور کا بھی حامل ہے۔

ایک لیٹر فیول میں 50 کلو میٹر تک سفر طے کرنے والے رکشے کی حد رفتار 60 کلو میٹر فی گھنٹہ ہے، خود کار نظام اور ہائبرڈ سسٹم کے تحت چلنے والا رکشا ایئرکنڈیشنڈ اور نان ایئرکنڈیشنڈ دونوں صورت میں دستیاب ہے اوراس میں مسافروں کے لیے وائی فائی کی سہولت بھی فراہم کی گئی ہے۔

کمپنی حکام کے مطابق نان ایئرکنڈیشنڈ رکشے کی قیمت 4 لاکھ روپے جبکہ ایئرکنڈیشنڈ رکشے کی قیمت ساڑھے 4 لاکھ روپے مقرر کی گئی ہے، ہائبرڈ رکشے کی خریداری کے لیے کمپنی کو کافی تعداد میں آرڈرز بھی موصول ہوئے ہیں اور جلد ہی سندھ کے بعد ملک کے دیگر صوبوں میں بھی اس فروخت کے لیے پیش کیا جائے گا۔

علاوہ ازیں ایکسپو سینٹر میں جاری تین روزہ آٹو پارٹس نمائش تین دن تک کامیابی سے جاری رہی، نمائش میں آٹو پارٹس کے ساتھ ساتھ موٹر سائیکلیں الیکٹرک کاریں، ہائبرڈ رکشہ، تھری وہیلز، ہیوی بائیکس، ٹریکٹرز اور بسیں رکھیں گئیں تھیں، اس کے علاوہ مختلف تعلیمی اداروں کی جانب سے پراجیکٹس کا ڈسپلے بھی کیا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں