The news is by your side.

Advertisement

اپنے ملک کا ایجنٹ ہوں، را کا ایجنٹ نہیں، مصطفیٰ کمال

کراچی: پی ایس پی رہنما مصطفیٰ کمال کا کہنا ہے کہ وہ پاکستان کے ایجنٹ ہیں را کے نہیں، اسٹیبلشمنٹ کے کے ایجنٹ ہوتے تو سارے مسائل ایک فون کال پر حل ہو جاتے۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام آف دی ریکارڈ میں گفتگو کرتے ہوئےکراچی کے سابق ناظم اور پاک سرزمین پارٹی کے رہنما مصطفی کمال کا کہنا تھا کہ میں را کا ایجنٹ نہیں،ملک میں تخریب کاری نہیں کرارہا،گٹرمیں رہ کرخود کوصاف نہیں کیا جاسکتا، اسٹیبلشمنٹ کاایجنٹ ہوتا تو انیس قائمخانی پرمقدمہ نہ بنتا اور سارے مسئلے ایک فون کال پرحل ہوجاتے۔

مصطفی کمال نے کہا کہ ایم کیوایم والے جس طرف ہیں اس طرف راکے ایجنٹ ہیں، کچھ لوگ ایک رات حراست میں رہ کر کارکنوں کی نشاندہی کرتے ہیں۔

مصطفی کمال کا کہنا تھا وہ اسٹیبلشمنٹ کے ایجنٹ ہوتے تو ان کی پارٹی کے صدرجھوٹے مقدمے میں جیل میں نہ ہوتے، انہوں نے کہا کہ اسٹیبلشمنٹ کے چہیتے وہ ہیں جن پر بائیس اگست کو غداری کا مقدمہ بنا اور تئیس تاریخ کو اسٹیبلشمنٹ سے سرٹیفیکٹ لے کر باہر آگئے۔

مصطفی کمال کا ایک سوال کے جواب میں کہنا تھا کراچی اور حیدرآباد میں چاکنگ لندن کے حکم پر ہوئی، ایم کیوایم پاکستان کے لندن سے رابطے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں