The news is by your side.

جب تک میرا استعفی منظور نہیں ہوتا میں سینیٹر ہوں، فیصل واوڈا

اسلام آباد : سابق پی ٹی آئی رہنما فیصل واوڈا کا کہنا ہے کہ میں سینیٹ سے استعفیٰ دوں گا ، یہ سیٹ عمران خان کی تھی، جب تک میرا استعفی منظور نہیں ہوتا میں سینیٹر ہوں۔

تفصیلات کے مطابق سابق پی ٹی آئی رہنما فیصل واوڈا نے سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اللہ کی مہربانی احسان ہےفتح دی، سپریم کورٹ نے ہائی کورٹ اور الیکشن کمیشن کے فیصلے کو کالعدم قرار دیا ہے، محترم بینچ نے میرے لئے جو الفاظ ادا کیے میرے لئے قابل فخرہیں۔

سابق پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھا کہ میں نے قانونی غلطی کی تھی، مجھےانصاف ملاہے، میں سینیٹ سےاستعفیٰ دوں گا ، یہ سیٹ عمران خان کی تھی۔

انھوں نے کہا کہ کل الیکشن ہوں،6 ماہ بعد یا اگلے گھنٹے میں لڑنےکیلئےاہل ہوں،عمران خان سےتعلق تھا ہے اوررہےگا۔

فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ اللہ نے اگر کسی کو دینا ہے تو کوئی روک نہیں سکتا، قابل ایماندار افسراور حافظ قرآن آرمی چیف بنے ہیں۔

سابق رہنما نے کہا کہ جلد از جلد الیکشن مانگنا ہمارا آئینی حق اور ٹائم پر ہونا بھی آئینی حق ہے، ابھی فی الحال میں کسی پارٹی میں نہیں جارہا۔

ان کا کہنا تھا کہ بغیر کسی شواہد کے نام لینابہت زیادتی ہے، عمران خان آنکھیں بند کرکے بھروسہ کرلیتے ہیں، خان صاحب آدھی رات کو آواز دینگے ہم حاضرہیں جلسہ ہم ٹی وی پردیکھیں گے۔

فیصل واوڈا نے مزید کہا کہ کچھ لوگ عمران خان کی سیاست کوبندگلی میں لے آئے ہیں،عمران خان جیسے لیڈر کو کسی کے خلاف بنا ثبوت کے بات نہیں کرنی چاہیے۔

سابق رہنما نے واضح کیا کہ جب تک میرا استعفی منظور نہیں ہوتا میں سینیٹر ہوں، پیپلز پارٹی کے نثار کھوڑوسینیٹرنہیں میں ہوں، سینیٹ کی نشست عمران خان کی تھی ویسےبھی استعفیٰ دینا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں