The news is by your side.

Advertisement

آئی بی ڈائریکٹر کا پاناما جے آئی ٹی ممبران کی معلومات اکھٹی کرنے کا اعتراف

اسلام آباد : انٹیلی جنس بیورو نے سپریم کورٹ کو جمع کرائے گئے جواب میں جےآئی ٹی کے کوائف اکٹھےکرنے کا اعتراف کرلیا جبکہ آئی بی،ایس ای سی پی اورایف بی آرنے پاناماجےآئی ٹی کےالزامات مسترد کردیئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پاناما جے آئی ٹی کے الزامات پر ڈائریکٹرجنرل انٹیلی جینس بیورو آفتاب سلطان نے سپریم کورٹ میں جواب جمع کرادیا ، جس میں آئی بی نے پاناماجےآئی ٹی ممبران کی معلومات اکھٹی کرنےکااعتراف کرلیا۔

آئی بی کےچیف نے توجیہ پیش کرتے ہوئے تسلیم کیا کہ پانامامعاملہ بہت اہم اورملکی سیاست پراثرانگیز ہونے والا کیس ہے ، اسلئےجے آئی ٹی ارکان کے کوائف اکٹھے کئے ۔

آفتاب سلطان نے موقف اختیار کیا کہ قومی اہمیت کے ہر معاملے کی معلومات اکھٹی کرنافرائض میں شامل ہے،لیکن معلومات جمع کرنے کے عمل کاافشاہوناتشویشناک ہے ۔

آئی بی نے جے آئی ٹی کوہراساں کرنے کا الزام مسترد کرتے ہوئے سپریم کورٹ کو بتایا کہ بلال رسول اورانکی اہلیہ کی نجی زندگی میں مداخلت کی نہ سوشل میڈیاکے اکاؤنٹس ہیک کئے۔


مزید پڑھیں : پاناما جے آئی ٹی کی سرکاری اداروں پر سنگین الزامات پر مشتمل چارج شیٹ عدالت میں جمع


خیال رہے کہ جےآئی ٹی نےسپریم کورٹ میں تحفظات کا اظہار کیا تھا کہ انٹیلی جینس بیورو پر جے آئی ٹی ممبران کو ہراساں کرنے اور ذاتی زندگی میں مداخلت کا الزام لگاتے ہوئے انکشاف کیا تھا کہ آئی بی اہلکار ممبران کے سوشل میڈیا اکاؤنٹس سے سیاسی وابستگیاں تلاش کرنے میں مصروف ہیں، آئی بی والے ممبران کے گھروں کے باہر بھی نظر آئے ہیں۔

دوسری جانب ایس ای سی پی اور ایف بی آر نے پاناما جے آئی ٹی الزمات مسترد کردیئے تھے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں