The news is by your side.

Advertisement

ورلڈ کپ 2019: عماد وسیم کی شاندار بیٹنگ، پاکستان نے افغانستان کو شکست دے دی

عماد وسیم کو مین آف دی میچ قرار دیا گیا

لیڈز : ورلڈکپ کے 36ویں میچ میں پاکستان نے عماد وسیم کی شاندار بیٹنگ کی بدولت سنسنی خیز مقابلے کے بعد افغانستان کو 3 وکٹوں سے شکست دے دی۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان اور افغانستان کی ٹیموں کے مابین لیڈز اسٹیڈیم میں ورلڈکپ کا 36واں میچ کھیلا گیا، سیمی فائنل تک رسائی حاصل کرنے کے لیے قومی ٹیم کو میچ میں فتح حاصل کرنا لازمی تھی۔

افغانستان اننگز 

افغانستان کی ٹیم کے کپتان گلبدین نائب نے ٹاس جیت پر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔ پاکستانی باؤلرز نے پہلے ہی اوور سے شاندار گیند بازی کی جس کی وجہ سے مخالف ٹیم کے بلے بازوں کو محتاط انداز اختیار کیا۔

افغان ٹیم کی پہلی وکٹ 27 کے مجموعی اسکور پر گری جب کپتان کو شاہین آفریدی نے پویلین کی راہ دکھائی، اسی طرح نئے آنے والے بیٹسمین کو بھی شاہین شاہ نے 27 کے ہی مجموعی اسکور پر آؤٹ کیا۔ عماد وسیم نے اننگز کے بارہویں اوور میں رحمت شاہ کو آؤٹ کیا۔

بعد ازاں اصغر افغان اور محمد نبی نے 64 رنز کی پارٹنر شپ قائم کر کے ٹیم کی پوزیشن مستحکم کرنے کی کوشش کی، البتہ اصغر افغان 42 رنز کے انفرادی اور 121 کے مجموعی اسکور پر پویلین لوٹے، چار رنز اضافے کے بعد اکرام اخیل بھی آؤٹ ہوئے جبکہ محمد نبی 202 رنز کے مجموعی اسکور پر پویلین روانہ ہوئے، افغان ٹیم کی آٹھویں وکٹ 210 ، نویں 219 کے مجموعی اسکور پر گری۔

افغانستان نے مقررہ پچاس اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 227 رنز بنائے، نجیب اللہ زادران اور افغر خان 42 ، 42 رنز بناکر نمایاں بلے باز رہے جبکہ شاہین آفریدی نے شاندار باؤلنگ کرتے ہوئے چار اہم کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ عماد وسیم، وہاب ریاض نے 2 ، 2 اور شاداب خان نے ایک کھلاڑی کی وکٹ حاصل کی۔

پاکستان کی اننگز

228 رنز ہدف کے تعاقب میں پاکستان نے بیٹنگ شروع کی تو پہلا کھلاڑی بغیر کسی رن پر آؤٹ ہوا، بعد ازاں امام الحق اور بابر اعظم نے محتاط انداز سے بیٹنگ کی اور اسکور کو 72 تک پہنچایا اسی لمحے امام الحق بھی 36 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

پاکستان کی تیسری وکٹ 81 کے مجموعی اسکور پر اُس وقت گری جب بابر اعظم 45 رنز کی اننگز کھیل کر آؤٹ ہوئے، حارث سہیل اور محمد حفیظ نے مجموعی اسکور میں 40 رنز کا اضافہ کیا اسی لمحے پروفیسر بھی 19 رنز کی اننگز کھیل کر پویلین لوٹ گئے، 142 پر حارث سہیل بھی آؤٹ ہوئے۔

کپتان سرفراز 156 کے مجموعی اسکور پر 22 رنز کی اننگز کھیل کر آؤٹ ہوئے، عماد وسیم اور شاداب خان نے 50 رنز کی پارٹنر شپ قائم کر کے صورت حال بہتر بنائی تو 206 پر شاداب کو بھی افغان باؤلر نے آؤٹ کردیا، نئے آنے والے بیٹسمین وہاب ریاض نے زخمی ہونے کے باوجود شاندار بیٹنگ کی، عماد وسیم نے چوکا لگا کر ٹیم کو فتح دلائی۔

وہاب ریاض نے 1 چھکے اور 1 چوکے کی مدد سے 15 رنز ناٹ آؤٹ کی قیمتی اننگز کھیلی جبکہ عماد سیم بھی 49 رنز کے ساتھ ناٹ آؤٹ رہے، پاکستان نے 2 گیندوں قبل ہدف حاصل کیا اور افغانستان کو تین وکٹوں سے شکست دی۔ پاکستان نے مسلسل تیسری فتح حاصل کر کے پوائنٹس ٹیبل پر چوتھی پوزیشن حاصل کرلی۔

ٹاس جیتنے کے بعد افغان کپتان گلبدین نائب کا کہنا تھا کہ ہمارے اسپنرز اچھے ہیں، دوسری اننگز میں فائدہ ہوگا۔ پاکستان اچھی ٹیم ہے، ہم اپنا 100 فیصد دینے کی کوشش کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کو بڑا ہدف دینے کی کوشش کریں گے۔

مزید پڑھیں: لیڈز: ممکنہ شکست پر افغانی شائقین آپے سے باہر، پاکستانی شخص پر حملہ کر دیا

قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ ہماری بولنگ اچھا پرفارم کر رہی ہے، ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کی۔ افغانستان کو کم ٹوٹل پر روکنے کی کوشش کریں گے۔

میچ سے قبل قومی ٹیم نے لیڈز کرکٹ گراؤنڈ میں بھرپور پریکٹس کی، سیمی فائنل میں رسائی کے لیے پاکستان کو افغانستان اور بنگلہ دیش سے اپنے میچز جیتنے ہوں گے۔

اسکواڈ

آج کے میچ کے لیے پاکستان ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی۔ ٹیم میں سرفراز احمد (کپتان)، امام الحق، فخر زمان، بابر اعظم، محمد حفیظ، حارث سہیل، عماد وسیم، شاداب خان، محمد عامر، وہاب ریاض اور شاہین آفریدی شامل ہیں۔

افغان ٹیم میں گلبدین نائب (کپتان)، رحمت شاہ، حشمت اللہ شاہدی، اصغر افغان، سمیع اللہ شنواری، محمد نبی، نجیب اللہ زادران، اکرام علی خیل، راشد خان، حامد حسن اور مجیب الرحمٰن شامل ہیں۔

وہاب ریاض کے ہاتھ میں انجری

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کی جانب سے کہا گیا ہے کہ وہاب ریاض کے دائیں ہاتھ میں ٹریننگ کے دوران چوٹ لگی ہے جس کی وجہ سے ان کے ہاتھ پر سوجن ہو گئی ہے۔

پی سی بی کے مطابق وہاب ریاض انگلی پر بینڈج لگا کر کھیل رہے ہیں، میچ کے بعد ان کی انجری کا مزید جائزہ لیا جائے گا۔  پاکستانی کرکٹ ٹیم اپنا آٹھواں میچ آج افغانستان کے خلاف لیڈز کے مقام پر کھیل رہی ہے۔ ٹاپ 4 کا مضبوط امیدوار بننے کے لیے پاکستان کو لیڈز میں کھیلا جانے والا میچ جیتنا لازمی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں