آئی سی سی کا عمر اکمل کے خلاف تحقیقات جاری رکھنے کا فیصلہ -
The news is by your side.

Advertisement

آئی سی سی کا عمر اکمل کے خلاف تحقیقات جاری رکھنے کا فیصلہ

دبئی: انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے پاکستانی کرکٹر عمر اکمل کے خلاف تحقیقات جاری رکھنے کا فیصلہ کر لیا ہے جس کے بعد ٹیسٹ کرکٹر کی مشکلات مزید بڑھ گئی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق اسپاٹ فکسنگ کے الزامات پر آئی سی سی نے کرکٹر عمر اکمل کے خلاف تحقیقات جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ہے، اس فیصلے نے عمر اکمل کی مشکلات بڑھا دی ہیں۔

پاکستان کرکٹ کے بیڈ بوائے عمر اکمل ان دنوں میچ فکسنگ کے الزامات پر آئی سی سی کے سخت سوالات کی زد پر ہیں، کرکٹر انٹرنیشنل کونسل کو مطمئن نہیں کر پائے ہیں کہ انھیں کس نے پیش کش کی تھی اور کیا پیش کش کی تھی، کرکٹر نے کونسل کو اس سلسلے میں بر وقت کیوں آگاہ نہیں کیا۔

ٹیسٹ بیٹسمین نے آئی سی سی کو اپنا بیان ریکارڈ کرا دیا ہے تاہم بین الاقوامی ادارہ عمر اکمل کے بیان سے مطمئن نہیں ہوا، آئی سی سی معاملے کی مزید چھان بین کررہی ہے۔

ہیڈ کوچ پر الزامات، پی سی بی نے عمر اکمل کو سزا سنادی

واضح رہے کہ عمر اکمل نے حال ہی میں ورلڈ کپ 2015 کے دوران اسپاٹ فکسنگ کی پیش کش کا انکشاف کیا تھا، 24 جون کو  دیے جانے والے ایک انٹرویو میں انھوں نے کہا تھا کہ انھیں ورلڈ کپ کے دوران اسپاٹ فکسنگ کی پیش کش ہوئی تھی۔

عمر اکمل نے انٹرویو میں دعویٰ کیا تھا کہ ورلڈ کپ 2015 میں انھیں میچ کے دوران 2 گیندیں چھوڑنے کے عوض 2 لاکھ ڈالرز کی پیش کش ہوئی تھی جسے انھوں نے مسترد کر دیا تھا۔

آئی سی سی نے اس بیان کے بعد عمر اکمل سے تحقیقات کا فیصلہ کرتے ہوئے بیان کی وضاحت طلب کی ہے، خیال رہے کہ عمر اکمل پہلے ہی پاکستان ٹیم سے باہر ہیں جس کا سبب ڈسپلن اور خراب فارم ہے، موجودہ تحقیقات کے بعد ان کی پریشانی میں مزید اضافہ ہو گیا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں