site
stats
کھیل

آئی سی سی کے نئے قوانین کرکٹ کی ہئیت میں کیا تبدیلی لائیں گے؟

لاہور: انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے کرکٹ کھیل کو مزید سنسنی خیز اور محفوظ بنانے کے لیے بلے کا حجم اور کھلاڑیوں کو ریڈ کارڈ دکھانے سمیت نئے قوانین وضع کر دیئے ہیں جن کا اطلاق 28 ستمبر سے ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے کرکٹ کے قوانین میں چند دلچسپ تبدیلیاں کی ہیں جس کے بعد کرکٹ کے مقابلے مزید کانٹے دار اور سنسنی خیز ہوجائیں گے جن کا اطلاق پاکستان اور سری لنکا کے درمیان سیریز سے ہوجائے گا دیکھنا ہے دونوں ٹیمیں ان قوانین سے کتنا فائدہ اٹھا پاتی ہیں۔

 

بلے کے حجم سے متعلق قانوں


 نئے قوانین میں بلے کی موٹائی کی حد 67 ملی میٹر جب کہ اس کے کناروں کی موٹائی کی حد 40 ملی میٹر رکھی گئی ہے جس کو ناپنے کے لیے ایمپائر کے پاس مخصوص آلہ ہوگا اور وہ میچ کے درمیان بلے کو ناپ سکتے ہیں تاہم بلے کی لمبائی اور چوڑائی میں کسی قسم کا ردو بدل نہیں کیا گیا ہے۔

ریڈ کارڈ کا استعمال 


میچ کے دوران جھگڑا کرنے یا ایمپائر سے بد تمیزی کے مرتکب کھلاڑی کو ریڈ کارڈ دکھا کر گراؤنڈ سے بھیجا جا سکے گا جیسا کہ فٹ بال یا ہاکی میں کیا جاتا ہے لیکن اب تک کرکٹ میں ایسا کوئی قانون نہیں تھا جس کی مدد سے جارح مزاج کھلاڑی کو گراؤنڈ سے باہر بھیج دیا جائے۔

متبادل کھلاڑیوں کی تعداد 4 سے 6 کردی گئی


ٹیسٹ کر کٹ پانچ روز پر مشتمل ہوتی ہے اور تھکا دینے والی اس کرکٹ میں کوئی بھی ٹیم گیارہ کے اسکواڈ میں سے 4 متبادل کھلاڑیوں کو کھیلا سکتے تھے تاہم نئے قوانین کے تحت اب 6 متبادل کھلاڑیوں کو کھیلا یا جا سکتا ہے۔

  ٹی ٹوئنٹی میں ڈی آر ایس کا استعمال اور ریویو کا طریقہ کار


ایک روزہ میچ کی طرح اب ٹی ٹوئنٹی میں بھی ڈی آر ایس استعمال کیا جا سکے گا اسی طرح ایمپائرز کال پر فیصلہ آنے پر چیلینج کرنے والی ٹیم کا ریویو ضائع نہیں ہوگا جب کہ ٹیسٹ میچوں میں ریویولینے کی حد کو 80 اوورز تک محدود کردیا گیا ہے۔

 

رن آؤٹ قوانین میں تبدیلی 


رن آؤٹ قوانین میں بھی چند تبدیلیوں کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کے تحت رن لینے کی کوشش میں بلے کا ایک بار کریز تک پہنچنا کافی ہوگا یعنی اگر بلے باز کا بیٹ ایک بار کریز کو چھو گیا اور پھر ہوا میں رہا اور پھر دوبارہ زمین کو نہ بھی چھوا اور اسی دوران گیند وکٹ کو لگ بھی جائے تو بیٹسمین کو آؤٹ نہیں قرار دیا جا سکے گا۔

 

کیچ آؤٹ قوانین میں تبدیلی 


اسی طرح اگر بلے باز کے بیٹ سے چھوتے ہوئی گیند فیلڈر یا وکٹ کیپر کے ہیلمٹ پر لگنے کے بعد زمین پر گرے کے بغیر فیلڈر کے ہاتھوں تک پہنچ جائے تو اس صورت حال میں کھلاڑی کو آؤٹ تصور کیا جائے گا۔

جڑی ہوئی بیلز کا استعمال 


نئے قوانین کے تحت اسٹیمپس میں اب جڑی ہوئی بیلز استعمال کی منظوری دی گئی ہے تاکہ بلے بازوں کو بالعموم اور وکٹ کیپر کو بالخصوص محفوظ بنایا جائے سکے جس کا فیصلہ میزبان کر کٹ بورڈ کی صوابدید پر ہوگا۔

ٹیسٹ اور ٹی ٹوئنٹی قوانین 


ٹیسٹ کرکٹ میں اگر وقفے سے 3 منٹ قبل کوئی کھلاڑی آؤٹ ہوجائے تو کھیل جاری رکھنے کے بجائے مقررہ وقت سے تین منٹ قبل ہی وقفہ کر دیا جائے گا جس کی حد پہلے 2 منٹ تھی۔

اسی طرح ٹی ٹوئنٹی میں ایک اننگز میں 10 سے کم اوورز تک محدود ہو گی تو ہر بولر2 اوورز کرا سکے گا اور اگر میچ 5 اوورز تک محدود ہوجا ئے تو بھی دو بولرز دو دو اوورز کراسکیں گے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top