The news is by your side.

کسی مسلمان کو ملک سے نکالا تو سینے پرگولی کھاؤں گا، بھارتی گلوکار کا اعلان

نئی دہلی : مشہور بھارتی گلوکار رفتار (دیلن نائر) مسلم مخالف شہریت بل پر مودی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اگر کسی مسلمان کو ملک سے باہر نکالا تو سینے پر گولی کھاؤں گا۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی ریپر کی جانب سے یہ اعلان ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب ریپر و کمپوزر کی کنسرٹ کی ایک ویڈیو وائرل ہوئی تھی جس میں وہ مودی سرکار پر تنقید کے نشتر برساتے ہوئے کہہ رہے تھے کہ مسلمان، عیسائی، سکھ سب بھائی ہیں۔

معروف بھارتی گلوکار دیلن نائر جنہیں دنیا رفتار ریپر کے نام جانتی ہے نے اپنے کنسرٹ کا آغاز کرنے سے پہلے بھارتی حکومت کو مسلمان مخالف شہریت کا بل منظور کرنے کی مخالفت کی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ رفتار کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے باعث مداحوں و سوشل میڈیا صارفین کی جانب انہیں خوب سراہا جارہا ہے تاہم بعض حلقوں کی جانب سے انہیں تنقید کا نشانہ بھی بنایا جارہا ہے۔

سوشل میڈیا پر جاری ویڈیو رفتار کا کہنا تھا کہ ‘ایک بات بالکل صاف بتا رہا ہوں، چاہے کل کیریئر چلے یا نہ چلے، کوئی مسئلہ نہیں، اتنا کمالیا ہے کہ آخر تک بھوکا نہیں مروں گا’۔

گلوکار نے اس کے بعد شائقین کو ارسن نامی اپنے باڈی گاڑد سے متعارف کراتے ہوئے کہا کہ ‘اس انسان کا نام ارشد ہے، یہ میرا ایسا خیال رکھتا ہے کہ کوئی مجھے دھکا بھی نہیں مار سکتا، اگر کوئی اس کو دیش (بھارت) سے نکالنے کی بات کرے گا تو سامنے گولی کھاؤں گا’۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ‘چاہے ہندو ہو، چاہے سکھ ہو، چاہے عیسائی ہو یا پھر مسلمان، سب ہمارے بھائی ہیں، کسی کو بھی باہر نہیں جانے دوں گا اور اس کے بعد جو میرے کیریئر کا ہوگا وہ تم خود دیکھ لینا، مجھے کوئی پروا نہیں’۔

Comments

یہ بھی پڑھیں