The news is by your side.

Advertisement

مظاہرین کو روکا گیا تو بھرپور ردِ عمل دیا جائے گا، عمران خان

فیصل آباد: تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ اگر اسلام آباد آنے والے مظاہرین کو حراست میں لیا اور روکا گیا تو ایسا ردعمل دیا جائے گا جسے حکومت برداشت نہیں کر سکے گی، نوازشریف ابھی سے گھبراہٹ کا شکار ہیں تو 2 تاریخ کو کیا کریں گے؟۔

فیصل آباد میں ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ جب حکمران کرپشن کرتے ہیں تو ملک کے ادارے تباہ ہوتے ہیں اور حکمران اپنی چوری کو بچانے کے لیے ملک کا نظریہ تباہ کررہے ہیں ایک چھوٹا سا ٹولا آخر کب تک ملک کو لوٹتا رہے گا؟۔

پڑھیں:  ملک میں جمہوریت رہے گی یا بادشاہت،2نومبرکو فیصلہ ہوگا،عمران خان

انہوں نے کہا کہ پاکستان اقبال کا خواب تھا جسے دنیا کے لیے ایک بہترین مثال بننا تھا مگر ملک پر ایک ٹولہ قابض رہا عوام پر خرچ کیے جانے والے پیسوں کو بیرونِ منتقل کرکے ملک کو نقصان پہنچاتا رہا۔ عمران خان نے کہا کہ جب وزیراعظم خود کرپٹ ہوگا تو وہ بیرون ملک سے کسی کا پیسہ واپس نہیں لاسکتا، نوجوانوں کو ملک کی آزادی کے لیے قربانیاں دینی پڑتی ہیں‘‘۔

مزید پڑھیں:  حکومت نے دھرنا روکا تو ذمہ دار خود ہو گی،عمران خان

چیئرمین تحریک انصاف حکومت کو متنبہ کیا کہ عوام پرامن دھرنے میں شرکت کریں گے اگر اسلام آباد مارچ کے مظاہرین پر تشدد یا پھر کسی کو گرفتار کیا گیا تو ایسا ردِعمل دیا جائے گا جسے برداشت کرنا حکومت کے لیے مشکل ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں: دھرنے سے قبل، اسلام آباد پولیس کے گریڈز میں‌ اضافہ

عمران خان نے فیصل آباد کے پُرجوش کارکنان کے جنون کو خراجِ تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ ’’نیا پاکستان اب زیادہ دور نہیں عوام جلد کرپٹ حکمرانوں سے نجات حاصل کریں گے ۔

اسے سے متعلق:  وزیراعظم اورعمران خان جمہوریت کیلئے خطرہ ہیں،خورشید شاہ

انہوں نے مزید کہا کہ ’’ ایسے وزیر اعظم سے استعفیٰ لینا ضروری ہے جس کی جماعت کے اپنے کارکنان وزیر کو قاتل کہتے ہوں‘‘۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں