The news is by your side.

Advertisement

‘اپوزیشن سازش کا حصہ نہیں تو خط دیکھنے سے بھاگی کیوں’

وفاقی وزیر اسدعمر نے کہا ہے کہ اپوزیشن سازش کاحصہ نہیں توخط دیکھنےسےبھاگ کیوں رہی ہے؟

ایک بیان میں اسدعمر نے کہا کہ خط کےجعلی ہونے کا ڈرامہ بند ہو جانا چاہیے قومی سلامتی کمیٹی کےاعلامیہ کے بعد یہ بحث ختم ہونی چاہیے عمران خان کسی ڈرتا ہوتا تو عالمی طاقتوں کےسامنےکھڑانہ ہوتا۔

اسدعمر نے کہا کہ 10، 15 ارب اگر باہر سے پھینکے جائیں تو چند لوگ ٹریپ میں آہی جاتے ہیں ہم اپوزیشن کے مطالبے پر ایوان میں خط کامعاملہ لانے کیلئے قرارداد لائے لیکن اپوزیشن نے اس تحریک کی مخالفت کردی۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ اپوزیشن اپنے ہی مطالبے سے پیچھے ہٹ گئی اپوزیشن نےپارلیمانی کمیٹی برائےقومی سلامتی کااجلاس بلانے کا کہا تھا اپوزیشن نےپارلیمانی کمیٹی برائےقومی سلامتی کابائیکاٹ کردیا اگر اپوزیشن سازش کاحصہ نہیں توخط دیکھنےسےبھاگ کیوں رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ قومی سلامتی کمیٹی میں شرکاکوتفصیلات فراہم کی گئیں یہ بحث ختم ہوجانی چاہیےکہ غیرملکی مراسلہ حقیقت ہے یا نہیں، رائےآئی کہ پارلیمان کی قومی سلامتی کمیٹی میں حقائق رکھےجائیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کہتی تھی بتادیں عدم اعتمادسےپیچھے ہٹ جائیں گے بدقسمتی ہے اتنے بڑے ایشو پر بھی اپوزیشن سیاست کو ترجیح دیتی ہے کمیٹی میں اپوزیشن نےشرکت نہ کر کے واضح کیا انہیں پہلے سے علم تھا اعلامیہ سےثابت ہوگیاغیرملکی مراسلہ ایک حقیقت ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں