The news is by your side.

ورلڈ کپ ٹرافی شیئر ہو تو؟ برطانوی ہائی کمشنر نے دلچسپ حل بتا دیا

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کا فائنل آج ہے، میلبرن میں مسلسل بارش کی پیشگوئی کے باعث ٹرافی پاکستان اور انگلینڈ میں شیئر ہوسکتی ہے ایسا ہوا تو برطانوی ہائی کمشنر نے اس کا دلچسپ حل ڈھونڈ لیا۔

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کا فائنل آج آسٹریلیا کے شہر میلبرن میں پاکستان اور انگلینڈ کے مابین کھیلا جائے گا، جس کے لیے کل کا ریزرو ڈے بھی مختص ہے تاہم تاہم محکمہ موسمیات نے دونوں دن شدید بارش کی پیشگوئی ہے، گوکہ آئی سی سی نے فائنل کو فیصلہ کن بنانے کے لیے متعدد قوانین کو تبدیل کیا ہے جس میں ٹاس مقررہ وقت سے قبل، آج کھیل کے اضافی وقت میں 90 منٹ کا اضافہ اور ریزرو ڈے میں بھی اضافی وقت کا دورانیہ بھی دو گھنٹے سے بڑھا کر چار گھنٹے کردیا گیا ہے

تاہم مسلسل بارش ہوئی اور دونوں دن میچ ممکن نہ ہوسکا تو پھر پاکستان اور انگلینڈ کو مشترکہ فاتح قرار دیا جاسکتا ہے اور ٹرافی دونوں ملک شیئر کریں گے، اگر ایسا ہوا تو دونوں طرف کے شائقین کے دل ٹوٹیں گے لیکن برطانوی ہائی کمشنر نے اس کا ایک دلچسپ حل پیش کردیا ہے۔

پاکستان میں برطانوی ہائی کمشنر کرسچن ٹرنر اے اسپورٹس کی ورلڈ کپ ٹرانسمیشن ’دی پویلین‘ کے مہمان بنے اور کرکٹ کے رنگ میں رنگ گئے اور پروگرام کے دیگر شرکا وسیم اکرم اور وقار یونس کے ساتھ بھنگڑا بھی ڈالا۔

اس موقع پر کرسچن ٹرنر نے کہا کہ فائنل جو بھی ٹیم جیتے، جیت میری ہوگی۔

میچ میں بارش کے رکاوٹ بننے اور میچ نہ ہونے پر دونوں ٹیموں کو مشترکہ فاتح قرار دیے جانے کی اطلاعات پر برطانوی ہائی کمشنر کرسٹن ٹرنر نے اس کا دلچسپ حل پیش کیا اور ہنستے ہوئے کہا کہ اگر بارش کے باعث فائنل نہ ہوسکے اور ٹرافی دونوں ملکوں میں شیئر ہو تو یہ ٹرافی میرے گھر بھی رکھی جاسکتی ہے۔

دوسری جانب برطانوی ڈپٹی ہائی کشمنر نے میچ سے قبل اپنے ایک ٹوئٹ میں کہا ہے کہ میرا دل انگلینڈ کے ساتھ ہے لیکن اگر پاکستان جیتا تو دل دل پاکستان گاؤں گا۔

ٹرنر کا مزید کہنا تھا کہ تیس سال بعد پاکستان انگلینڈ کا فائنل ہو رہا ہے، پرجوش ہوں اور دونوں ٹیموں سے اچھے کھیل کی امید ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ انگلینڈ کی بیٹنگ اور پاکستان کی بولنگ دنیا بھر میں لاجواب ہے بالکل اسی طرح جس طرح دونوں ممالک کی دوستی بے مثال ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں