The news is by your side.

Advertisement

تشدد،غیرقانونی حراست یا بداخلاقی پرآہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا، آئی جی پنجاب

لاہور: آئی جی پنجاب پولیس عارف نواز کا کہنا ہے کہ حراست میں تشدد، موت اورغیرقانونی حراست پر ایس ایچ او ذمہ دار ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق آئی جی پنجاب پولیس عارف نواز نے آر پی او، ڈی پی او، سی پی او اور سی سی پی او، ڈی آئی جیز کو مراسلہ جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ یونیفارم والے حد میں رہ کرکام کریں ورنہ گھربھجوا دیا جائے گا۔

مراسلے میں کہا گیا ہے کہ تشدد،غیرقانونی حراست یا بداخلاقی پر آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا، تشدد چاہے تفتیش والے کریں یا آپریشن والے ذمے دار ایس ایچ او ٹھہرے گا۔

آئی جی پنجاب پولیس نے کہا کہ حراست میں تشدد، موت اورغیرقانونی حراست پر ایس ایچ او ذمے دار ہوگا، علاقے کا ایس ایچ او ذمہ دار ٹھہرانے کے ساتھ بلیک لسٹ کردیا جائے گا، بلیک لسٹ ایس ایچ او کو کسی بھی جگہ پوسٹنگ نہیں دی جائے گی۔

اس سے قبل گزشتہ روز آئی جی پنجاب پولیس عارف نواز کی زیرصدارت پولیس تھانوں میں ملزمان کے تشدد اور ہلاکت کے معاملے پر سینٹرل پولیس آفس لاہور میں ویڈیو لنک کانفرنس ہوئی تھی۔

یاد رہے کہ لاہور کے تھانہ شمالی چھاؤنی میں پولیس کے تشدد سے ہلاک ہونے والے نوجوان عامر مسیح پر تشدد کی سی سی ٹی وی ویڈیو منظر عام پر آئی ہے جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ پولیس اہلکاروں نے اسپتال کے سامنے بھی اس پر تشدد کیا، سادہ کپڑوں میں ملبوس 2 پولیس اہلکار عامر مسیح کو موٹرسائیکل پر طبی امداد کے لیے اسپتال لائے۔

سی سی ٹی وی ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ عامر کو موٹرسائیکل سے اتارا گیا تو وہ نیچے گرگیا، عامر کے گرنے کے باوجود بھی اسے لاتوں سے مارا گیا اور پھر دونوں اہلکار اسے گھیسٹ کر اسپتال کے اندر لے گئے۔

پولیس تشدد سے جاں بحق ہونے والے 25 سالہ عامر مسیح کو چوری کے الزام میں گزشتہ ہفتے تھانہ شمالی چھاؤنی بلایا گیا تھا جہاں 4 روز تشدد کرنے کے بعد 2 ستمبر کو نازک حالت میں صدر کینٹ کے نجی اسپتال میں لایا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں