The news is by your side.

Advertisement

عزیز آباد سے برآمد اسلحہ جنگوں میں استعمال ہونے والا تھا،آئی جی سندھ

کراچی: آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے عزیز آباد میں برآمد ہونے والے اسلحہ سے متعلق واٹر ٹینک کی تھیوری رد کردی اور کہا کہ عزیز آباد میں اسلحہ جہاں رکھا گیا وہ اسلحہ ڈپو تھا، برآمد ہونے والا اسلحہ سال 2015ء کے اخبارات میں لپٹا ہوا ہے۔

یہ پڑھیں:عزیزآباد،زیرزمین ٹینک سے بھاری مقدارمیں اسلحہ برآمد

کراچی کے علاقے عزیز آباد سے ملنے والا اسلحہ کب چھپایا؟ جگہ کیا تھی؟ آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے اہم رازوں سے پردہ ہٹادیا اورکہا ہے کہ اسلحہ جہاں چھپایا گیا وہ ٹینک نہیں اسلحہ ڈپو تھا جس میں ہوا کی آمدورفت کا نظام وضع کیا گیا تھا۔

وزیراعلی کا اسلحہ برآمد کرنے والی ٹیم کے لیے 50 لاکھ روپے انعام کا اعلان

اے ڈی خواجہ کا کہنا تھا اسلحہ ٹارگٹ کلنگ نہیں جنگوں میں استعمال ہونے والا تھا، اسلحہ 2015ء کے اخباروں میں لپیٹا گیا تھا، نائن زیرو کے قریب سے ملنے والا یہ اسلحہ دو ٹرکوں اور پانچ موبائلوں میں لاد کر فوج کےاسلحہ خانے منتقل کیا گیا جہاں اس کافرانزک ٹیسٹ کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:عزیز آباد سے برآمد اسلحہ بڑی لڑائی میں استعمال ہونا تھا، ڈی جی رینجرز

عزیز آباد سے پکڑا جانے والااسلحہ پاک فوج کے سپرد

اسلحہ برآمدگی کیس، جے آئی ٹی تشکیل، متحدہ قیادت سے تفتیش کا امکان

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں