طیبہ تشدد کیس: ایڈیشنل سیشن جج اور ان کی اہلیہ کے خلاف چارج شیٹ جاری -
The news is by your side.

Advertisement

طیبہ تشدد کیس: ایڈیشنل سیشن جج اور ان کی اہلیہ کے خلاف چارج شیٹ جاری

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت اسلام آبادمیں تشدد کا نشانہ بننے والی کمسن گھریلو ملازمہ طیبہ کیس کے ملزمان راجہ خرم علی اور ان کی اہلیہ ماہین کے خلاف جسٹس محسن اخترکیانی نے چارج شیٹ جاری کردی۔

تفصیلات کےمطابق اسلام آباد میں طیبہ تشدد کیس کے مرکزی ملزمان کے خلاف اسلام آباد ہائی کورٹ نے چارج شیٹ جاری کردی جس کے مطابق ملزمان کو 6 جرائم کا مرتکب قرار دیا گیا۔

چارج شیٹ میں بتایا گیا ہے کہ ملزمہ ماہین ظفر نے ملازمہ طیبہ پر تشدد کیا اپنی اہلیہ کو بچانے کے لیے راجا خرم علی خان نے طیبہ کو غائب کیا بعد ازاں پولیس نے طیبہ کو بازیاب کرایا تھا۔

چارج شیٹ کے مطابق جب پولیس نے طبیہ کو بازیاب کرایا تو اس کے ہاتھوں اور انگلیوں پر گہرے زخم کے نشانات پائے گئے تھے جبکہ ماہین ظفر کی جانب سے طیبہ کے ہاتھوں کو جلایا بھی گیا تھا۔


طیبہ تشدد کیس: سابق جج اور اہلیہ پر فرد جرم عائد


یاد رہےکہ رواں سال 10 فروری کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں ہونے والی گذشتہ سماعت کے دوران طیبہ کے والد نے ملزمان کو ایک مرتبہ پھر معاف کرنے کا بیان حلفی جمع کرادیا تھا، جس پر عدالت نے جج راجہ خرم علی اور ان کی اہلیہ کی درخواست ضمانت منظور کرلی تھی۔

واضح رہےکہ طیبہ کیس کی سماعت کے لیے نیابنچ تشکیل دے دیا گیا ہے ہائی کورٹ کےجسٹس عامر فاروق تیرہ جون کو طیبہ تشدد کیس کی سماعت کریں گے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں