The news is by your side.

Advertisement

عدالتی حکم کے باوجود پی ٹی آئی کارکنان کی گرفتاریاں ، ڈپٹی کمشنر اسلام آباد ایک گھنٹے میں طلب

اسلام آباد: اسلام آباد ہائی کورٹ چیف جسٹس نےعدالتی حکم کے باوجود پی ٹی آئی کارکنان کی گرفتاریاں پر ڈپٹی کمشنر اسلام آباد کو ایک گھنٹے میں طلب کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی ورکرز کو ہراساں اور گرفتار کرنے کے معاملے پر اسلام آبادہائیکورٹ چیف جسٹس نےڈپٹی کمشنر اسلام آباد کو ایک گھنٹے میں طلب کر لیا۔

جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ جب ہم نے آڈر دیا تھا ایسا نہیں کرنا توکیوں گرفتار کیاجارہا۔

یاد رہے اسلام آباد ہائی کورٹ نے ڈپٹی کمشنر کو گرفتار پی ٹی آئی کارکنان کو رہا کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہا تھا کہ اگر کسی کے خلاف کوئی کنفرم رپورٹ ہےتوآگاہ کیا جائے۔

عدالت نے استفسار کیا عدالت نے جب کہا کارکنان کو ہراساں نہ کیا جائے تو کیوں کیا ؟ جس پر ڈپٹی کمشنر نے بتایا کہ لانگ مارچ کے آتے ہی نیکٹا سےتھریٹ آگئی کہ حالات ٹھیک نہیں، خبریں گردش کررہی تھیں کہ لوگوں کےپاس بندوقیں ہیں، توڑ پھوڑ ہوگی۔

عدالت نے استفسار کیا کہ ابھی تک جتنے لوگوں کو گرفتار کرلیاگیاکس جرم میں گرفتار کرلیا ہے؟ ڈی سی اسلام آباد نے بتایا کہ مختلف رپورٹس ہیں اس وجہ سےلوگوں کو گرفتار کرلیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں