The news is by your side.

Advertisement

‘کورونا کے دوران ٹک ٹاک کم مراعات یافتہ طبقے کیلئے آمدن کا ذریعہ’

اسلام آباد : اسلام آباد ہائی کورٹ نے ٹک ٹاک پر پابندی کے خلاف درخواستوں پر پی ٹی اے رولز طلب کرلئے، چیف جسٹس نے کہا ، کورونا کے دوران ٹک ٹاک کم مراعات یافتہ طبقے کیلئے آمدن کا ذریعہ رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ میں ٹک ٹاک پر پابندی کے خلاف درخواستوں پر سماعت ہوئی ، اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے سماعت کی، درخواست گزاروں کی جانب سے اسامہ خاور اور حیدر امتیاز ایڈووکیٹ عدالت پیش ہوئے۔

وکیل پی ٹی اے نے بتایا کہ ٹک ٹاک انتظامیہ کے ساتھ پی ٹی اے کے مذاکرات ہوتے رہے، جس پر چیف جسٹس نے کہا پی ٹی اے میں اس طرح کے فیصلے کون کر رہا ہے، کیا کچھ لوگ یہ فیصلہ کرتے ہیں؟ کون لوگ یہ فیصلہ کرتے ہیں کہ کیا درست ہے اور کیا غلط۔

چیف جسٹس اطہرمن اللہ کا کہنا تھا کہ اس لئے رولز بنانے بہت ضروری ہیں، کورونا کے دوران ٹک ٹاک کم مراعات یافتہ طبقے کیلئے آمدن کا ذریعہ رہا ہے، ٹک ٹاک انٹرٹینمنٹ کا ایک اہم ذریعہ رہا ہے۔

جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس میں کہا کہ موٹروے پر بھی ایک واقعہ پیش آیا تھا پھر موٹروے کو بھی بند کر دیں، پوری دنیا میں یہ نہیں ہوتا، دنیا آگے جا رہی ہے اور آپ پیچھے لے کر جا رہے ہیں، ہماری اخلاقیات اتنی مضبوط ہونی چاہئیں کہ کوئی چیز ان پر اثرانداز نہ ہو سکے۔

عدالت نے ٹک ٹاک پر پابندی کے خلاف درخواستوں پر پی ٹی اے رولز طلب کرتے ہوئے سماعت 4 ہفتوں تک کے لیے ملتوی کردی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں