The news is by your side.

Advertisement

زلفی بخاری کا نام بلیک لسٹ سے نکالنے سے متعلق فیصلہ محفوظ

اسلام آباد : عدالت نے عمران خان کے قریبی دوست زلفی بخاری کا نام بلیک لسٹ میں ڈالنے کے معاملے پرفریقین کے دلائل مکمل ہونے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کے قریبی دوست زلفی بخاری کا نام بلیک لسٹ سے نکالنے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔

عدالت میں وفاقی کی جانب سے زلفی بخاری کا نام بلیک لسٹ میں ڈالنے پر جواب جمع کرایا گیا جبکہ زلفی بخاری نے کے وکیل نے کہا کہ پاکستانی کو ملک میں آزاد نقل وحرکت کی آزادی ہے۔

عدالت نے استفسار کیا کہ زلفی بخاری کا پاکستانی پاسپورٹ نمبرعدالت کو بتایا جائے اور بلیک لسٹ کی قانونی حیثیت بھی عدالت کوبتائی جائے۔

چیئرمین پی ٹی آئی کے قریبی دوست زلفی بخاری کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ نام بلیک لسٹ سے نکالا جائے، کاروبار، بچے اور فیملی برطانیہ میں ہے۔

عدالت میں ثابت ہوگیا میرا نام ای سی ایل میں نہیں تھا‘ زلفی بخاری

اسلام آباد ہائی کورٹ نے وکلا کے دلائل سننے کے بعد زلفی بخاری کا نام بلیک لسٹ سے نکالے جانے سے متعلق فیصلہ محفوظ کرلیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ زلفی بخاری عمران خان کے ہمراہ عمرہ کی ادائیگی کے لیے سعودی عرب جا رہے تھے، امیگریشن حکام نے ان کا نام بلیک لسٹ میں ہونے کے باعث انہیں بیرون ملک سفر سے روک دیا تھا تاہم کچھ دیر بعد ہی ان کا نام بلیک لسٹ سے نکال دیا گیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں