The news is by your side.

Advertisement

امریکی سفارت کار کرنل جوزف کانام ای سی ایل میں شامل کرنے سے متعلق کیس کا فیصلہ محفوظ

اسلام آباد : امریکی سفارت کار کرنل جوزف کا نام ای سی ایل میں ڈالنے اور ٹرائل کے حوالے سے عدالت نے فیصلہ محفوظ کر لیا، امریکی ملٹری اتاشی کی گاڑی کی ٹکر سے پاکستانی شہری عتیق جاں بحق ہوگیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ میں امریکی سفارت کار کی گاڑی کی ٹکر سے شہری عتیق بیگ کی ہلاکت کے معاملہ پر کرنل جوزف کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کے کیس پر سماعت ہوئی، کیس کی سماعت اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے کی۔

وزارت داخلہ کی جانب سے ڈپٹی سیکرٹری پیش ہوئے۔

جسٹس عامر فاروق نے کہا ایک سفیر کی سزا کا طریقہ کار عدالت کو بتایا جائے،یہ تو ہو نہیں سکتا کہ جرم بھی ہو اور سزا بھی نہ ہو، جس پر وکیل مرزا شہزاد کا کہنا تھا امریکا اجازت دے تو پاکستان میں جرم کا ٹرائل شروع کیا جا سکتا ہے، دوسری صورت میں امریکہ میں بھی جرم کا ٹرائل ہو سکتا ہے۔

عدالت نے ریمارکس دیے ڈپلومیٹ کیخلاف کارروائی کاعمل جنیوا کنونشن کے تحت بتایا جائے، ڈپلومیٹ کے حقوق ہیں تو پاکستانیوں کے بھی حقوق ہیں نیٹ

وزارت خارجہ نے عدالتی حکم پرعمل کرنے کا یقین دلادیا۔

یاد رہے کہ امریکی سفارت کار کی گاڑی کی ٹکر سے شہری کی موت کے کیس میں وزارت داخلہ نے کرنل جوزف کو بلیک لسٹ قرار دے دیا تھا۔


مزید پڑھیں :عتیق قتل کیس ، امریکی سفارتکار کرنل جوزف بلیک لسٹ قرار


یاد رہے کہ 8 اپریل اسلام آباد کے علاقے تھانہ کوہسارکی حدود میں تیز رفتار گاڑی میں سوارنشے میں دھت امریکی ملٹری اتاشی کرنل جوزف نے موٹرسائیکل سوار نوجوان عتیق بیگ کو ٹکرماری جس سے وہ موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا تھا جبکہ حادثے میں دو افراد زخمی بھی ہوئے تھے۔

جوان کی ہلاکت پرمتوفی عتیق بیگ کے والد کی مدعیت میں اسلا م آباد کے تھانہ کوہسار میں مقدمہ درج کرلیا گیا تھا۔

بعد ازاں وفاقی حکومت نے امریکی سفارت کار کرنل جوزف کا نام واچ لسٹ میں ڈالنے کے بعد اس کا ڈرائیونگ لائسنس منسوخ کردیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں