The news is by your side.

Advertisement

نوازشریف کی طبی بنیادوں پرسزا معطلی کی درخواست پرسماعت آج ہوگی

اسلام آباد: اسلام آباد ہائی کورٹ میں سابق وزیراعظم نوازشریف کی طبی بنیادوں پر سزا معطلی کے لیے دائر درخواست پرسماعت آج ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ میں جسٹس عامرفاروق کی سربراہی میں دو رکنی بینچ آج مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف کی طبی بنیادوں پرسزا معطلی کی درخواست پرسماعت کرے گا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ میں گزشتہ روز خواجہ حارث کی جانب سے دائر کی گئی درخواست میں نیب، احتساب عدالت کے جج اور سپریٹنڈنٹ کوٹ لکھپت جیل لاہور کو فریق بنایا گیا ہے۔

درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ نوازشریف کی بیماریوں کا علاج پاکستان میں ممکن نہیں ہے، ڈاکٹروں نے بھی نوازشریف کو بیرون ملک جا کر علاج کروانے کی رائے دی ہے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ میں دائر کی گئی درخواست کے ساتھ نوازشریف کی میڈیکل رپورٹس اور ان کی بیماریوں سے متعلق ڈاکٹرز کی رائے کو بھی منسلک کیا گیا ہے۔

نوازشریف کی جانب سے دائر درخواست میں کہا گیا ہے کہ اگر عدالت العزیزیہ اسٹیل ملز کے مقدمت میں سزا معطل کرتی ہے تو اس سے پراسیکیوشن کے کیس پر کوئی فرق نہیں پڑے گا۔

نوازشریف کے وکیل کی جانب سے درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ سزا کے خلاف اپیل پر فیصلے تک احتساب عدالت کی طرف سے دی جانے والی سزا معطل کرکے طبی بنیادوں پر ضمانت دی جائے۔

نواز شریف کی طبی بنیاد پر ضمانت کے لیے ایک اور درخواست دائر

یاد رہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے اس سے قبل سابق وزیراعظم نوازشریف کی طبی بنیادوں پر سزا معطلی کی درخواست مسترد کی تھی جس کے بعد انہوں نے سپریم کورٹ سے رجوع کیا تھا۔

سپریم کورٹ آف پاکستان نے نوازشریف کی 6 ہفتوں کے لیے سزا معطل کی تھی اور عدالت عظمیٰ نے اس میں توسیع کی درخواست مسترد کردی تھی جس کے بعد انہیں کوٹ لکھپت بھیج دیا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں