site
stats
پاکستان

اسلامی نظریاتی کونسل میں مَردوں کے حقوق سے متعلق بل پر غور

اسلام آباد: اسلامی نظریاتی کونسل نے تحفظ خواتین بل کی طرح مردوں کے حقوق کا بل لانےکی درخواست پر غور کرنے کا فیصلہ کر لیا، مطالبے کو کونسل کے آئندہ اجلاس کے ایجنڈے پر رکھ کر رائے لی جائے گی۔


یہ پڑھیں: مرد بھی مظلوم ہیں، حقوق دیے جائیں، اسلامی نظریاتی کونسل میں درخواست


تفصیلات کے مطابق مردوں کے حقوق کی درخواست کونسل کے ممبر زاہد محمود قاسمی نے دی ہے جسےچیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل مولانا شیرانی نے منظور کرلیا ہے جو آئندہ اجلاس میں زیر بحث لائی جائے گی۔

letter

کونسل کے ممبر مولانا زاہد محمود قاسمی نے درخواست میں موقف اختیارکیا کہ بعض خواتین مردوں پر تشدد کرکے گھر سے نکال دیتی ہیں جب کہ اسلام میں مَردوں کے بھی حقوق ہیں جسے معاشرے میں اہمیت نہیں دی جا رہی ہے۔

درخواست کی منظوری کے بعد اسے آئندہ ہونے والے تین روزہ اجلاس کے آٹھ نکاتی ایجنڈے میں رکھ دیا گیا ہے اس اجلاس کی سربراہی اسلامی نظریاتی کونسل کے چیئرمین مولانا شیرانی کریں گے اور معزز علمائے کرام اور اراکین کونسل شریعت کی رو سے اپنی رائے پیش کریں گے۔

اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رکنِ‌اسلامی نظریاتی کونسل اور درخواست کے محرک زاہد محمود قاسمی کا کہنا تھا کہ حقوق نسواں بل کے مخالف نہیں لیکن ملک کے بعض حصوں میں مردوں کےساتھ زیادتیاں ہورہی ہیں جو ناقابل برداشت ہیں، اگر کونسل نے رائے تسلیم کی تو حقوق مرداں ڈرافٹ بھی تیار کریں گے۔

اسلامی نظریاتی کونسل کےاجلاس میں شرکت کی دعوت کے لیے وزیر اعظم نواز شریف اور صدرِ مملکت ممنوں حسین کو خط ارسال کردیئے گئے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top