The news is by your side.

Advertisement

‘جوآپ نےسمجھا وہ میں نےکہا ہی نہیں، میں اس لیے آیاہوں’

وفاقی وزیر داخلہ اعجاز شاہ اے این پی سے متعلق دیے گئے بیان پر وضاحت کے لیے باچا خان مرکز پشاور پہنچے اور عوامی نیشنل پارٹی کی قیادت سے ملاقات کی۔ اس موقع پر وزیر دفاع پرویز خٹک بھی ہمراہ تھے۔

ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو میں وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے کہا کہ ہم خوشی سےایک دوسرےکےساتھ ملنے کے بعد واپس جارہےہیں جوآپ نےسمجھا وہ میں نےکہا ہی نہیں، میں اس لیے آیاہوں، ہماری آمدسےپی ڈی ایم کاکوئی تعلق نہیں۔

انہوں نے کہا کہ کوروناکی صور ت حال ہےجلسوں سےمتعلق جماعتوں کوخودسوچناچاہیے حکومت کی جانب سے جلسے جلوسوں پرکوئی پابندی نہیں لیکن جلسےکرنےوالوں کوخودسوچناچاہیےکہ جلسے کرنے چاہئیں؟ کورونا وبا کے دوران کیاجلسےکرناٹھیک ہے؟

اس موقع پر پرویز خٹک نے کہا کہ ہمیں اےاین پی مرکزی سیکریٹریٹ میں عزت دی گئی جوغلط فہمی پیداہوئی تھی اب وہ ختم ہوگئی ہے بیان سےاے این پی قیادت کی دل آزاری ہوئی تومعذرت کرتےہیں۔

پرویزخٹک نے کہا کہ جرگہ لےکرباچاخان مرکزآئے اور اےاین پی نےمعذرت قبول کی، پختون روایات کو مدنظر رکھتے ہوئے حکومت کاجرگہ قبول کیا، مہمانوں نےقبول کیاجوشہادتیں ہوئی وہ ملک اورقوم کیلئے ہوئی۔

اے این پی کے رہنما ایمل ولی خان نے کہا کہ وفاقی وزیرنےمعذرت کی توہم استعفے کے مطالبے سے پیچھے ہٹے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں