The news is by your side.

Advertisement

دنیا بھر میں پاکستانی سفارت خانوں میں من پسند تقرریوں اور تبادلوں کا انکشاف

اسلام آباد: دنیا بھر میں پاکستانی سفارت خانوں میں بڑے پیمانے پر غیر قانونی، من پسند تقرریوں اور تبادلوں کا انکشاف ہوا ہے۔

تفصیلات کے مطابق بیرون ملک پاکستانی سفارت خانوں میں من پسند تقرریوں اور تبادلوں سے متعلق اسلام آباد ہائی کورٹ میں ایک درخواست دائر کی گئی ہے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ میں وزارتِ خارجہ میں غیر قانونی تعیناتیوں کے خلاف درخواست سماعت کے لیے مقرر ہو گئی ہے، ہائی کورٹ کے جسٹس میاں گل حسن اورنگ زیب کل اس کیس کی سماعت کریں گے۔

یہ درخواست عدالت میں ڈائریکٹر پبلک ڈپلومیسی ماجد خان لودھی نے بیرسٹر ظفر اللہ کے ذریعے دائر کی ہے۔ درخواست میں وفاقی حکومت کو بذریعہ سیکریٹری، وزارتِ خارجہ اور سیکریٹری امور خارجہ فریق بنایا گیا ہے۔

نیوزی لینڈ، آذربائیجان کے لیے نامزد پاکستانی سفرا کی وزیر خارجہ سے ملاقات

درخواست گزار نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ وزارتِ خارجہ کے ذریعے دنیا بھر میں پاکستانی سفارت خانوں میں بڑے پیمانے پر غیر قانونی اور من پسند تقرریاں کی جا رہی ہیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز وزارت خارجہ نے افغانستان کے لیے منصور احمد خان کو سفیر نامزد کیا ہے، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے انھیں مبارک باد دیتے ہوئے کہا تھا کہ آپ کو ذمہ داریاں آپ کے شان دار سروس ریکارڈ کو پیش نظر رکھتے ہوئے سونپی گئی ہیں۔ منصور احمد خان اس سے قبل ویانا میں بطور سفیر اپنی خدمات سر انجام دے چکے ہیں۔

گزشتہ ہفتے نیوزی لینڈ اور آذربائیجان کے لیے بھی سفیر نامزد کیے گئے تھے، نیوزی لینڈ کے لیے مراد اشرف جنجوعہ اور آذربائیجان کے لیے بلال حئی کو سفیر نامزد کیا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں