The news is by your side.

Advertisement

ہم پی ٹی آئی کا حصہ تھے، ہیں اور رہیں گے، جہانگیر ترین

لاہور : جہانگیر ترین کا کہنا ہے کہ ہم پی ٹی آئی کا حصہ تھے، ہیں اوررہیں گے ، عمران خان انصاف پسندانسان ہیں، امید ہے انصاف کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق جہانگیر ترین نے عدالت میں پیشی کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا خداکاشکرہے31مئی تک ضمانت میں توسیع ہوگئی، عدالت نے31 مئی تک ایف آئی اےکوتفتیش مکمل کرنےکاکہا، جب بھی عدالت نے بلایا ہم پیش ہوئے، تمام سوالات سےمتعلق ہم نے مکمل منی ٹریل دیں۔

جہانگیرترین کا کہنا تھا کہ تینوں ایف آئی آرمیں شوگراسکینڈل میں ملوث ہونے کا ذکرنہیں، کھلےعام کہہ رہاہوں ہم پی ٹی آئی کاحصہ تھےہیں اوررہیں گے، ہم عمران خان کے خلاف نہیں ، میرےدوست میرےساتھ کھڑےہیں،وزیر اعظم سے جاکر ملے ہیں۔

انھوں نے بتایا کہ وزیراعظم سےملاقات کے باوجود پنجاب حکومت نےہمارےخلاف انتقامی کارروائی شروع کی لیکن خان صاحب انصاف پسندانسان ہیں، امید ہے وہ انصاف کریں گے۔

جہانگیرترین نے کہا پنجاب حکومت نےمیرےگروپ کےلوگوں پردباؤڈالنا اور میرےگروپ والوں کے تبادلےشروع کردیے، راجہ ریاض کو قومی اسمبلی میں نامزد کیا ہےوہ اسمبلی میں بات کریں گے اور دیگرایم پی ایزسےبھی بات کرتےہیں ہمارے گروپ سے بھی کریں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ میں نےنہ کسی کانام لیاہےنہ میں نام لوں گا، ہم پی ٹی آئی سےباہرنہیں نکلے،پی ٹی آئی میں موجودہیں، ہم حکومت کے ساتھ ہیں اس میں کسی کوشک نہیں ہونا چاہیے۔

جہانگیرترین نے کہا کہ الگ گروپ ہرپارٹی میں ہوتےہیں،آئینی حق سےبات کریں گے،اس گروپ کےجوفیصلےہوں گےوہ اجتماعی ہوں گے، میراخیال ہےکوئی معاملہ ٹیڑھاہوگیاہے اسے سیدھا کرنا ہے۔

یاد رہے گذشتہ روز تحریک انصاف کے رہنما سلمان نعیم اور عون چوہدری نے جہانگیر ترین گروپ کا باقاعدہ اعلان کیا تھا ،  گروپ کا نام ’جہانگیر ترین ہم خیال گروپ’ رکھا گیا  جبکہ گروپ نے قومی اور صوبائی اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر بھی مقرر کردیے۔

تحریک انصاف کے رہنما عون چوہدری نے بتایا  تھاکہ ایم این اے راجہ ریاض قومی اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر ہوں گے، پنجاب اسمبلی میں سعید اکبر نوانی جہانگیر ترین گروپ کے پارلیمانی لیڈر ہوں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں